وزیراعظم کی زیر صدارت کابینہ اجلاس‘ مختلف ممالک کیساتھ معاہدوں پر دستخط کی منظوری

24 نومبر 2017

اسلام آباد(وقائع نگار خصوصی )وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس جمعرات کو وزیراعظم آفس میں ہوا۔ کابینہ نے مختلف ملکوں کے ساتھ معاہدوں اور مفاہتی یادداشتوں پر دستخط کی منظوری دی۔ اجلاس میں ڈنمارک اور جمہوریہ سلواکیہ کی وزارت خارجہ کے ساتھ باہمی سیاسی مشاورت کیلئے مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کی منظوری دی گئی۔ کابینہ نے مرتضیٰ خان کو پی او ایف بورڈ کا مالی مشیر تعینات کرنے کی منظوری دی جبکہ رحمت اﷲ خان کو نیپرا میں ممبر بلوچستان تعینات کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ وفاقی کابینہ نے نسیم ورک کی بطور جج سپیشل کورٹ سینٹرل فیصل آباد، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ناصر حسین کی بطور جج بینکنگ کورٹ بہاولپور جبکہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نوید احمد کو بطور جج بینکنگ کورٹ گوجرانولہ تعیناتی کی منظوری دی۔ سابق چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل (ر) محمد ذکاء اللہ نشان امتیاز (ملٹری) کے لئے حکومت سعودی عرب کی طرف سے ’’کنگ عبدالعزیز میڈل آف ایکسی لینس اور حکومت ملائیشیا کی طرف سے آنریری ایوارڈ آف ملائیشین آرمڈ فورسز آرڈر آف ویلور گیلینٹ کمانڈر آف ملائیشین آرمڈ فورسز، فرسٹ ڈگری کی منظوری موثر بماضی دی گئی۔حکومت فلسطین کی طرف سے پاکستان کے سابق سفیر ضمیر اکرم کے لئے ’’سٹار آف میرٹ‘‘ کی موثر بماضی منظوری دی گئی۔اجلاس میں ایشیاء اور بحرالکاہل کیلئے اقوام متحدہ کے اکنامک اینڈ سوشل کمیشن (اے پی سی آئی سی ٹی) اور نیشنل سکول آف پبلک پالیسی (این ایس پی پی) جبکہ سری لنکا انسٹی ٹیوٹ آف ڈویلپمنٹ ایڈمنسٹریشن (ایس ایل آئی ڈی اے) اور این ایس پی پی کے درمیان مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کرنے کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں نیشنل انرجی اینڈ افیشنسی اینڈ کنزرویشن اتھارٹی (این ای ای سی اے) کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی تشکیل کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں سگریٹ کے پیکٹوں پر تصویری وارننگ کے حوالہ سے نیشنل ہیلتھ سروسز ریگولیشنز اینڈ کوآرڈینیشن ڈویژن کی طرف سے پیش کی گئی تجاویز اور سفارشات کی بھی منظوری دی گئی۔ وزیراعظم نے ریٹائر ہونے والے کابینہ سیکرٹری ندیم حسن آصف کی خدمات کو سراہا۔