ہیلتھ کیئر کمشن کیخلاف خانیوال میں ڈاکٹروں کی ہڑتال، ہسپتالوں کی ناکہ بندی

24 نومبر 2017

خانیوال، ٹھٹھہ صادق آباد (نمائندہ نوائے وقت، خبر نگار) پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے زیراہتمام پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کا مبینہ ناروا رویے کے خلاف سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں مکمل ہڑتال کی گئی ہسپتالوں کی تالے بندی کردی گئی۔ اس ہڑتال اور احتجاج کا مرکز ی کیمپ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں لگایا گیا جہاں پی ایم اے کے صدر ڈاکٹر عبدالقادر اعوان، جنرل سیکرٹری ڈاکٹر زاہد خان، سابق صدرڈاکٹر شفیق الرحمن کمبوہ، ڈاکٹر خالد رفیق، ڈاکٹر رفیق گجر، ڈاکٹر محمدرفیع، ڈاکٹر الطاف محی الدین، ڈاکٹر عاصم منیر، ڈاکٹر شاہد، ڈاکٹر محمدشفیق،ڈاکٹر محبوب پراچہ، ڈاکٹر حسن پراچہ کے علاوہ ضلع بھر سے ڈاکٹروں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر ڈاکٹروں نے کہا کہ ایم بی بی ایس اور سپیشلسٹ ڈاکٹروں کے کلینگ سیل کر رہے ہیں جبکہ عطائیوں سے بھاری رشوت لے کر چھوڑ دیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم عام شہریوں سے معذرت خواہ ہیں کہ انہیں ہڑتال سے تکلیف ہو رہی ہے مگر انہیں بھی ہمارا ساتھ دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن، محکمہ ماحولیات کے ضابطے ڈاکٹروں کے ساتھ مل کر طے کئے جائیں۔ اس موقع پر ڈاکٹروں نے واک کا اہتمام کیا۔ انہوں نے کہاکہ جب تک مطالبات نہیں مانے جاتے ڈاکٹر سیاہ پٹی باندھ کر کام کریں گے اور احتجاج کا دائرہ پورے پنجاب میں پھیلایا جائے گا۔ ہسپتالوں کی ہڑتال کی وجہ سے مریضوں کو سخت دشواری کا سامنا رہا۔ رورل ہیلتھ سنٹر ٹھٹھہ صادق آباد میں بھی ڈاکٹروں، عملہ نے مکمل ہڑتال کی گئی۔آوٹ ڈور بند کرتے ہوئے مکمل بائیکاٹ کیا گیا،آوٹ ڈور بند ہونے سے مریض ذلیل وخوار ہوتے رہے۔ ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث ڈسٹرکٹ ہسپتال خانیوال میں مریضوں کو دشواریوں سے بچانے کے لیے چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ ڈاکٹر ارشد ملک، پروگرام انچاج DHDC ڈاکٹر ابرار، ڈاکٹر ریحان ایم ایس ڈسٹرکٹ ہسپتال، ڈاکٹر آصف، ڈاکٹر علی اطہر خود او پی ڈی میں دن بھر مریضوں کا چیک اپ کرتے رہے ۔