افغانستان :خودکش دھماکہ آپریشن :حقانی گروپ کے 5 کمانڈروں سمیت 39 ہلاک

24 نومبر 2017

کابل (آئی این پی + این این آئی + اے ایف پی) افغانستان میں خودکش، ڈرون حملے اور آپریشن میں 39 افراد مارے گئے، جارجیا کے 3 فوجیوں اور بچوں سمیت بیسیوں افراد زخمی ہوگئے۔ بتایا جاتا ہے ننگرہار میں شہری برطرف ضلعی پولیس کمانڈر شیخ اکرم کی بحالی کیلئے مظاہرہ کررہے تھے کہ بمبار نے خود کو اڑا لیا۔ 8 افراد مارے اور بچوں سمیت 15 زخمی ہوگئے۔ وردک میں حقانی کمانڈر قدرت اللہ کے مارے جانے کی تصدیق ہوگئی۔ افغان انٹیلی جنس نے حقانی نیٹ ورک کے5 اہم کمانڈروں سمیت 21دہشتگردوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے ،ادھر ننگرہارمیں داعش نے اپنے 15جنگجوئوں کے سر قلم کردیئے۔ دوسری جانب بگرام بیس کے قریب گشت کے دوران گاڑی کے قریب موٹر سائیکل بم دھماکے میں جارجیا کے 3 فوجی زخمی ہوگئے۔ صوبائی گورنر کے ترجمان عطاللہ کھوگیانی نے بتایا ہے کہ دھماکہ شہر کے پہلے ضلع میں ایک سابق ضلعی مقامی پولیس کمانڈر شیخ اکرم کے گھر کے پاس ہوا۔ترجمان کا کہنا ہے کہ لوگوں نے شیخ اکرم کی حمایت میں انکے گھر کی طرف ایک ریلی کا اہتمام کیا تھا ۔دھماکہ اس وقت ہوا جب وہ انکے گھر سے روانہ ہورہے تھے۔ صوبہ ننگرہار میں امریکی ڈرون حملوں میں داعش کے 10 دہشت گرد ہلاک ہوگئے۔ افغان ملٹری کی 201صلیب کور کے بیان میں کہا گیا ہے کہ تازہ فضائی کاروائی ضلع دیہ بالا میں کی گئی جس میں ضلع کے علاقے پایان میں گروپ کے ٹھکانوں کو بغیر پائلٹ کے طیاروں سے نشانہ بنایا گیا۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ حالیہ رپورٹس کے ذریعے معلوم ہوا ہے کہ شدت پسند گروپوں کے درمیان اختلافات کے باعث لڑائی شروع ہوچکی ہے اور وہ ایک دوسرے کو قتل کررہے ہیں۔ این ڈی ایس کی طرف سے بیان میں کہا گیا صوبہ میدان واردک کے ضلع نارکھ میں این ڈی ایس سپیشل یونٹ کے آپریشن کے دوران حقانی نیٹ ورک کے 5اہم کمانڈر مارے گئے جبکہ 3دیگر کو گرفتارکرلیا گیا۔ مارے جانے والے کمانڈروں کی شناخت قاری حمیداللہ عرف قریشی، قاری ندرت، قاری نصرت اللہ، مولوی غلام اور قاری حمزہ کے نام سے ہوئی ہے جو صوبے میں گروپ کے انٹیلی جنس سربراہ تھے۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ کاروائی کے دوران گروپ کے 16دیگر دہشتگرد بھی مارے گئے، بڑی مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد کرلیا گیا۔ وزارت دفاع کے بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ جارجین فوجی نیٹو کے زیر قیادت ریزولیٹ سپورٹ مشن میں مصروف تھے جن کی شناخت پاپونا خوراوا،عمر برجز اور نگزر اوسندیزے کے نام سے ہوئی ہے جنھیں فوری طور پر بگرام کے ہوائی اڈے کے ہسپتال میں منتقل کردیا گیا۔ یاد رہے کہ 2001 سے افغانستان میں جارجیا کے 32 فوجی ہلاک اور 280 زخمی ہوچکے ہیں۔