پروین رحمن قتل کیس‘سندھ پولیس نے پیشرفت رپورٹ سپریم کورٹ جمع کرادی

24 نومبر 2017

اسلام آبا(نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ میں سماجی کارکن پروین رحمان قتل ازخود نوٹس کیس میںسندھ پولیس کی پیش رفت رپورٹ پیش کردی گئی ۔ عدالت نے فریق وکلاء کے رپورٹ پر اعتراضات طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیئے ملتوی کردی ہے۔جمعرات کوجسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی تو ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل سندھ نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ پروین رحمان قتل کے تمام ملزم پکڑے گئے ہیں اور پولیس نے تحقیقات مکمل کر لی ہے ،ٹرائل کورٹ میں معاملہ آخری مرحلہ میں ہے ، جسٹس عظمت سعید کے استفسار پر پراسیکیوٹر نے کہاکہ مرکزی ملزم رحیم سواتی گرفتار ہو چکا ہے ،اس دوران مقتولہ کی بہن زہرہ یو سف کی جانب سے پیش ہونے والے وکیل نے کہا کہ پولیس کی رپورٹ پر تحریری اعتراضات دائر کرنے کی مہلت دی جائے ۔ ایڈیشنل پراسیکیوٹرنے کہاکہ مقدمہ میں سماعت طویل عرصہ تک ملتوی کی جائے،۔جسٹس عظمت سعید نے کہاکہ لمبی تاریخ کیوں ڈالی جائے تو پراسیکیوٹر نے کہاکہ پولیس حکام اور پراسکیوشن کو کراچی سے آنا پڑتا ہے اس لئے خزانہ پر بوجھ پڑتاہے جسٹس عظمت سعید نے کہاکہ پیسہ کی بچت کیسے کرنی ہے ،ہم سے نہ پوچھیں،ہم سے نہ پوچھیں کس کے پاس کتنی اور کونسی گاڑیاں ہیں کیونکہ ہم رہتے اسلام آباد لا ہور میں ہیںلیکن کراچی کا سب پتہ ہے ،کون کہاں آپریٹ کرتا ہے سب معلوم ہے ،۔عدالت نے زہرا یوسف کے وکیل کو اعتراضات دائر کرنے کی مہلت دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی ہے۔

رپورٹ جمع