وفاقی کابینہ نے مختلف ملکوں سے معاہدوں اور مفاہمتی یادداشتوں کی منظوری دیدی

24 نومبر 2017

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا اعلامیہ کے مطابق کابینہ نے نیپرا کے ممبر بلوچستان کے لئے رحمت اللہ کو تعیناتی کی منظوری دیدی۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ناصر حسین کو بنکنگ کورٹ بہاولپور کا جج تعینات کر دیا گیا جبکہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج گوجرانوالہ نوید احمد بھی بنکنگ کورٹ کے جج تعینات کر دئیے گئے۔ ایڈمرل ریٹائرڈ ذکاء اللہ کو سعودی عرب اور ملائیشیا کے ایوارڈ کی منظوری دیدی گئی۔ فلسطین میں پاکستانی سفیر ضمیر اکرام کو سٹار آف میرٹ دینے کی منظوری دی گئی۔ کابینہ نے مرتضٰی خان کو پی او ایف بورڈ کا فنانشل ایڈوائزر مقرر کر دیا ہے۔ پاکستان اور ڈنمارک کے درمیان سیاسی مشاورت کے ایم او یو پر دستخطوں کی منظوری دیدی گئی۔ سلواک ری پبلکن کے ساتھ بھی سیاسی مشاورت کے دوطرفہ ایم او یو کی منظوری دیدی گئی۔ یو این اقتصادی و سماجی کمشن، نیشنل سکول آف پالیسی میں معاہدے پر دستخطوں کی منظوری بھی دیدی گئی۔ نیشنل انرجی ایفی شینسی اینڈ کنزرویشن اتھارٹی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی تشکیل کی منظوری دیدی گئی۔ سکریٹ کے پیکٹ پر دستاویزی وارننگ بڑھانے سے متعلق بین الوزارتی سفارت منظور کر لی گئیں۔ وزیراعظم نے ریٹائرڈ ہونے والے کابینہ سیکرٹری ندیم حسن آصف کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔ 

وفاقی کابینہ