ایس ای سی پی‘تجارتی تنازعے حل کرنے کیلئے کمیشن بنانے کا فیصلہ

24 نومبر 2017

کراچی(کامرس رپورٹر)سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان(ایس ای سی پی) نے کمپنیوں کے آپس کے لین دین کے تنازعات کے حل کیلئے ثالثی کمیشن اور تصفیہ کمیشن بنانے کا فیصلہ کیا ہے ،کمپنیوں میں فراڈ، دستاویزات میں جعل سازی سے تبدیلی، کمپنیوں میں ناقابل ضمانت جرائم، ایسے کیس جن میں مفاد عامہ کا معاملہ درپیش ہو یامعاشرے کے ایک بڑے طبقے کے حقوق کا تحفظ درپیش ہو کو ثالثی کمیشن اور تصفیہ کمیشن میں پیش کیے جا سکیں گے ، اس ضمن میں ایس ای سی پی نے کمپنیز(میڈی ایشن اینڈ کولنسیلی ا یشن)ریگولیشن 2017جاری کر دیا ہے۔ریگولیشن کے مطابق یہ کمیشن اعلی عدلیہ کے ریٹائرڈ ججوں، سینئر وکلا، چارٹرڈ اکائونٹنٹس، ٹیکس ماہر، کاسٹ اینڈ مینجمنٹ اکائونٹنٹ پر مشتمل ہوںگے ، ہر تنازع کے حل کیلئے بننے والا کمیشن اس تاریخ سے کام شروع کرے گا،جس کا تعین ایس ای سی پی کرے گی، ریگولیشن کے مطابق یہ ثالثی اور تصفیہ کمیشن دونوں اطراف کا مقف جاننے اور دونوں فریقین اور ان کے گواہان کا موقف سننے کے بعد اس تنازع کے حل کیلئے اپنی سفارشات کمیشن کو ارسال کریں گے، جس کی روشنی میں ان میں حتمی معاملات طے کیے جائیں گے اور فریقین کی درخواست پر ثالثی کمیشن اور تصفیہ کمیشن کے کسی بھی ممبر کو کمیشن سے خارج کر دیا جائے گا تاہم اس کیلئے پارٹیوں کو یہ ثابت کرنا ہوگا کہ اس ممبر نے اپنے مینڈیٹ کے مطابق خدمات سرانجام نہیں دی ہیں۔