اسٹاک مارکیٹ میں مندی ‘ سرمایہ کاروں کے83ارب روپے ڈوب گئے

24 نومبر 2017

کراچی(این این آئی)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میںدوروزہ تیزی کے بعدکاروباری ہفتے کے چوتھے روز جمعرات کواتارچڑھائو کے بعد مندی کارجحان رہااور کے ایس ای 100انڈیکس 40500 ،40400 اور40300کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا۔سرمایہ کاری مالیت میں 83 ارب 30 کروڑ روپے سے زائدکی کمی ریکارڈ کی گئی۔حکومتی مالیاتی اداروں، مقامی بروکریج ہائوسز اوردیگرانسٹی ٹیوشنز کی جانب سے توانائی اور ٹیلی کام سمیت دیگرسیکٹر میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس کی 40712کی بلندسطح پر بھی دیکھا گیا۔تاہم سیاسی افق پر چھائی بے یقینی کی کیفیت کے باعث مقامی سرمارگروپ تذبذب کاشکار نظرآئے اور اپنے حصص فروخت کرنے کو ترجیح دی جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای 100انڈیکس 40136پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا۔مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100انڈیکس 325.67پوائنٹس کمی سے40266.21 پوائنٹس پر بنداہوا۔مجموعی طورپر344کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے119کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں اضافہ،218کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں کمی جبکہ9کمپنیوں کے حصص بھائو میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں 83 ارب 30 کروڑ 92 لاکھ 70 ہزار 482روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی ، جس کے باعث سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر 83 کھرب 57 ارب 84 کروڑ 81 لاکھ 92 ہزار 322 روپے ہوگئی۔مجموعی طور پر 10 کروڑ 18 لاکھ 39 ہزار820شیئرزکاکاروبار ہواجوبدھ کے مقابلے میں 5 کروڑ 51 لاکھ 55 ہزار 620 شیئرزکم ہے۔