اسٹاک ایکس چینج میں شریعہ کمپلائنٹ ٹریڈنگ کاونٹر کی منظوری

24 نومبر 2017

کراچی (کامرس رپورٹر) سکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کے شریعہ ایڈوائزری بورڈ نے پاکستان سٹاک ایکسچینج میں شریعہ کمپلائنٹ ٹریڈنگ کاونٹر بنانے کی اصولی منظوری دے دی ہے۔ اسٹاک ایکسچینج میں شریعہ کمپلائنٹ کاونٹر کی تجویز پاکستان اسٹاک ایکسچینج کی جانب سے پیش کی گئی جس کا بنیادی مقصد اسٹاک ایکسچینج میں شریعہ کمپلائنٹ حصص کی ٹریڈنگ کی سیٹلمنٹ کا طریق کار کو الگ کرنا ہے۔ شریعہ کمپلائنٹ ٹریڈنگ کاونٹر میں حصص کی سیٹلمنٹ کا فارمولہ T+2 کے بجائے T+0 ہو گا۔ اسٹاک ایکسچینج میں شریعہ کمپلائنٹ کاونٹر کے قیام سے شریعہ کمپلائنٹ حصص میں سرمایہ کاری کرنے والے سرمایہ کاروں کے لئے آسانی پیدا ہو گی اور وہ T+2 سیٹلمنٹ سے منسلک رسک سے بھی بچ جائیں گے۔ ٹریڈنگ کے شرعی اصول کے مطابق حصص اس وقت تک نہیں بیچے جا سکتے جب تک کہ ان کی ڈیلیوری خریدار کے اکاونٹ میں نہ پہنچ جائے۔ اسی تصور کی روشنی میں شریعہ کمپلائنٹ حصص کی سیٹلمنٹ کے T+0 کا فارمولہ متعارف کروایا جا رہا ہے۔ ایس ای سی پی کے شریعہ ایڈوائرزی بورڈ نے حصص کی T+0 سیٹلمنٹ کا کاونٹر متعارف کروانے کی اصولی منظوری دے دی ہے تاہم اس طریق کار کے تحت حصص کی ائل ٹائم کامیاب سیٹلمنٹ کے تجربے کے بعد اس قائم کیا جائے گا۔ شریعہ ایڈوائزری بورڈ نے ہدایت کی ہے کہ شریعہ کمپلائنٹ کاونٹر بنانے کے لئے اسٹاک ایکسچینج، نیشنل کلئرنگ کمپنی اور سینٹرل ڈیپازٹری کمپنی کے ریگولیشنز میں ضروری ترامیم کے بعد اس تجویز کو حتمی منظوری کے لئے بورڈ میں پیش کیا جائے۔ ایس ای سی پی کے شریعہ ایڈوائزری بورڈ نے اسلامی مالیاتی اداروں کے لئے معیارت دینے والی اکاونٹنگ اینڈ آڈٹنگ آرگنائزیشن کے تین معیارات، شریعہ اسٹینڈرڈ نمبر 17، 18 اور استینڈرڈ نمبر 23 کا بھی جائزہ لیا اور ان کی اصولی منظوری دی۔ شریعہ بورڈ نے اسلامک لپیٹل مارکیٹ کے قیام اور سود سے پاک معیشت کے فروغ کے لئے ایس ای سی پی کی کاوشوں کو سراہا۔