مُٹھی بھر اشرافیہ 6کروڑمحنت کشوں کا استحصال کررہا ہے،حبیب جنیدی

24 نومبر 2017

کراچی (خصوصی رپورٹر)حبیب بنک ورکرز فرنٹ آف پاکستان(سی بی اے)کے سر پرستِ اعلیٰ سینئر مزدور رہنما حبیب الدین جنیدی نے کہا کہ پاکستان میں مزدور اور ملازمت پیشہ طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد کی تعداد تقریباَساڑھے چھ کروڑ ہے لیکن اتنی بڑی تعداد میں ہونے کے با وجود مُٹھی بھر طبقہ اشرافیہ اُن کا بدترین استحصال کررہا ہے کیونکہ وہ غیر متحد اور غیر منظم ہیں ۔ وہ حبیب بنک ورکرز فرنٹ آف پاکستان (سی بی اے) کے چوالیسویں ’’یوم تاسیس ‘‘ کی مرکزی تقریب سے کراچی میں ایک مقامی ہال میں بحیثیت مہمانِ خصوصی خطاب کررہے تھے جس سے ان کے علاوہ مرکزی صدر حاجی محمد یعقوب ،سینئر نائب صدر (اوّل) سیّدہ نادرہ پروین،قائم مقام سیکرٹری جنرل ناصر الدین محمود ، مرکزی قائدین ذوالفقار احمد خان تنولی،جمال نیاز،محمود عالم بابو،محمد عاصم اسلم ،اظہر پٹھان ،غلام مجتبیٰ ہزاروی،شاہد سلطان اورمحمد حسین نے بھی خطاب کیا۔واضح رہے کہ ’’ورکرز فرنٹ‘‘کا یوم تاسیس ملک بھر کے 25سے زائد اہم شہروں میں بھی منایا گیا جن میں حیدرآباد

،سکھر،لاہور،ملتان،بہاولپور،ساہیوال،گجرات،،گوجرانوالہ،سرگودھا،راولپنڈی،اسلام آباد،جہلم،سیالکوٹ،پشاور،کوہاٹ،مردان،کوئٹہ اور دیگر شہر شامل ہیں۔حبیب الدین جنیدی نے اپنے خطاب میں کہا کہ پورے پاکستان میں ٹریڈ یونینز اور مزدور تحریک ایک شدید بحران سے دو چار ہیں کیونکہ فری مارکیٹ اکا نومی اور بد ترین سرمایہ دارانہ نظام کے اس دور میں اُنہیں اپنے وجودکو بر قرار رکھنا دن بہ دن مشکل ہوتا جارہا ہے ۔