پاکستان انٹرنیشنل سکول ”اے لیول“ کے طلبہ و طالبات کی گریجویشن تقریب

24 جون 2011
جدہ کی ڈائری ۔۔۔ امیر محمد خان
پاکستان انٹرنیشنل سکول ، انگلش سیکشن، جدہ میں ”اے لیول“ کے طلبہ و طالبات کی گریجویشن تقریب منعقد ہوئی جس میں سکول کے لنک آفیسر اور قونصل سی اے قمر صدیق راجا کے علاوہ او آئی سی کے اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل برائے معاشی امور ایمبیسڈر حمید، اردو نیوز کے مینجنگ ایڈیٹر طارق مشخص نے شرکت کی۔ ان کے علاوہ اساتذہ، طلبہ و طالبات کے والدین، میڈیا اور کمیونٹی کے معزز اراکین بھی موجود تھے۔ تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا۔ بعد ازاں دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے اور سکول کی پرنسپل کو دعوت خطاب دی گئی۔
پرنسپل مسز سحر کامران نے مہمانوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ پاکستان انٹرنیشنل سکول تعلیم کا ایک اہم اور مضبوط ستون ہے۔ یہ وہ ادارہ ہے جہاں نہ صرف تعلیم بلکہ پاکستان کے روشن مستقبل کے لئے طلباءکی مجموعی کردار سازی بھی کی جاتی ہے۔ بین الاقوامی شہرت کے حامل اس سکول میں ہم طلبہ و طالبات کو بہتر سے بہتر ایسا ماحول فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہیں جس سے مستقبل کے معماران میں نہ صرف جذبہ حب الوطنی پروان چڑھے بلکہ ان کو علم و آگہی اور مہارت کے مواقع بلا امتیاز میسر آ سکیں۔ ہم ”خوب سے خوب تر کی جانب سفر“ پر یقین رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان انٹرنیشنل سکول ، انگلش سیکشن میں یونیورسٹی آف لندن کے تعاون سے شروع کیا جانیوالا انڈر گریجویٹ پروگرام، سکول کی تاریخ کا ایک اور سنگ میل ہے جس میں کامیابی کا ایک سال مکمل کرنے کے بعد 2011ءکیلئے اکاﺅنٹنگ اور فنانس، اکنامکس و مینجمنٹ اور بزنس کے لئے داخلے شروع ہو چکے ہیں۔
پرنسپل مسز سحر کامران نے ”گریجویٹ“ طلبہ و طالبات کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج ہم سکول کے ان ہونہار طلبہ و طالبات کو داد تحسین دینے کے لئے اکٹھے ہوئے ہیں جنہوں نے تعلیم کے میدان میں اپنی کامیابیوں سے نہ صرف سکول بلکہ ملک کا نام بھی روشن کیا ہے۔ انہوں نے طلباءسے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ آپ میں سے ہر ایک نے اس ادارے کی ترقی اور کامیابی میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ آپ کی کامیابیاں اس ادارے کے لئے سرمایہ افتخار ہیں لیکن آپ کو یاد رکھنا چاہئے کہ یہ آپکی کامیابی کے سفر کی ابتداءہے جب آپ سکول کو الوداع کہہ کر جائیں تو یہ مت بھولئے کہ آپ یہاں کس لئے آئے تھے۔ اس حقیقت کو بھی فراموش مت کیجئے کہ آپ کی آموزش کا عمل جاری و ساری ہے۔ مجھے یقین ہے کہ آپ نے پاکستان انٹرنیشنل سکول ، انگلش سیکشن میں بہترین وقت گزارا ہے۔ میں مستقبل میں آپ کی کامیابیوں کے لئے دعاگو ہوں۔
پرنسپل سحر کامران نے سکول کے عملے کے تمام ارکان کا تہ دل سے اظہار تشکر کیا جن کی شبانہ روز محنت کے باعث طلبہ و طالبات کامیابی کی اس منزل تک پہنچ سکے۔ انہوں نے والدین کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے اپنے بچوں کی اخلاقی اور جذباتی معاونت کی۔ انہوں نے سکول کے لنک آفیسر قمر صدیق راجا، تمام معزز مہمانوں اور خاص طور پر اردو نیوز کے منیجنگ ایڈیٹر طارق مشخص کے مخلصانہ تعاون کا بھی شکریہ ادا کیا۔
پرنسپل سحرکامران کے خطاب کے بعد اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل او ای سی، فار اکنامک افیئرز ایمبیسڈر حمید، سکول کے لنک آفیسر قمر صدیق راجا، سعودی دانشور طارق مشخص اور پرنسپل مسز سحر کامران نے کامیاب طلبہ و طالبات میں اسناد اور تمغے تقسیم کئے۔ رافیہ فاروق کو فزکس، کیمسٹری اور بایولوجی میں، عائشہ طارق کو اکاﺅنٹنگ اور میتھمیٹکس، علوینا احمد کو بزنس سٹڈیز اور عائشہ امجد کو اکنامکس میں ٹاپ اچیور ایوارڈ دیا گیا جبکہ حسام اللہ عثمانی کو کیمسٹری، فزکس، پیور میتھس اور مکینکس میں، عمار فاروق کو بائیولوجی اور فزکس میں، عزیر احمد طارق کو کیمسٹری اور فزکس، علی عمیر کو کیمسٹری، عدیل خان درانی کو فزکس جبکہ عائشہ طارق کو کیمسٹری میں آﺅٹ سٹینڈنگ اچیومنٹ ایوارڈ دیا گیا۔ اس سال کے بہترین سٹوڈنٹس عدیل درانی اور عائشہ طارق قرار پائے۔ سال کی بہترین سائنس سٹوڈنٹ کا اعزاز رافیہ فاروق کے حصے میں آیا۔ کھیلوں کے حوالے سے اس سال کے بہترین سپورٹس مین اور ویمن کے ایوارڈ بالترتیب عمر انجم اور ماہا خالد کو دئیے گئے جبکہ اینکر آف دی ائیر کا ایوارڈ عدیل درانی نے حاصل کیا۔
قبل ازیں ریسیپشن اور Y1 کے بچوں نے ”یو آر مائی سن شائن“ پر اپنی خوبصورت پرفارمنس پیش کی۔ اس موقع پر سال کے بہترین طالب علموں عدیل درانی اور عائشہ طارق نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اساتذہ، والدین اور خاص طور پر سکول کی پرنسپل مسز سحر کامران کا شکریہ ادا کیا اورکہا کہ ہم زندگی کے نئے باب کا آغاز کرنے جا رہے ہیں۔ ہمیں معلوم ہے کہ آگے چل کر بہت سے چیلنجز کا سامنا کرنا ہو گا مگر سکول نے ہمیں تعلیم اور کردار سازی کے حوالے سے جو کچھ عطا کیا اس کے ذریعے ہم ان چیلنجز کا بآسانی سامنا کر سکیں گے۔
سعودی دانشور طارق مشخص نے اپنے خطاب میں کامیاب طلبہ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ مجھے اس بات کا یقین ہے کہ آپ کامیابی کے اس سفر کو جاری رکھیں گے اور پی آئی ایس جے، ای ایس کےلئے مستقبل میں بھی باعث فخر کارنامے انجام دیں گے۔ حال ہی میں سکول کے زیر انتظام چلائی جانے والی مہم میں، جو فعال پاکستان کے عنوان سے تھی، طلباءنے نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ اس مہم نے پاکستان سے آپکی محبت اور خلوص نیز جذبہ¿ افتخار کو اجاگر کیا۔ مجھے یقین ہے کہ آج کے یہ طلباءجو مستقبل کے معمار ہیں کل پاکستان ان پر فخر کرے گا۔ طارق مشخص نے کہا کہ میں سکول کے سٹاف کو بھی مبارکباد پیش کرتا ہوں جو پرنسپل مسز سحر کامران کی قیادت میںطلبہ و طالبات کو مستقبل کے چیلنجوں سے نبردآزما ہونے کے قابل بنانے کے لئے مخلصانہ کوششیں جاری رکھے ہوئے ہیں اور انہیں زندگی میں آگے بڑھنے کے لئے علم اور اعتماد سے لیس کر رہے ہیں۔ میں ایک بار پھر شکریہ ادا کرتا ہوں کہ آپ نے مجھے اس پر مسرت موقع پر منعقدہ تقریب میں شرکت کیلئے مدعو کیا۔ میں سکول کی ترقی اور کامیابی کے لئے دعاگو ہوں۔
او آئی سی کے اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل برائے معاشی امور ایمبیسڈر حمید نے کہا کہ مجھے سکول کے طلبہ کی کارکردگی دیکھ کر بے انتہاءخوشی ہوئی۔ انکی یہ کامیابی سکول کی پرنسپل مسز سحر کامران، انتظامیہ اور اساتذہ کی انتھک محنت کی عکاس ہے۔ میں اسلامی کانفرنس تنظیم کے رکن، پاکستان کو مبارکباد دینا چاہتا ہوںکہ وہ تعلیمی اعتبار سے او آئی سی ممالک کے لئے ایک شاندار مثال اور نمونہ ہے۔ تنظیم کے 57 رکن ممالک کی سائنس و ٹیکنالوجی میں تعاون کی نگراں کمیٹی کا ہیڈ کوارٹرز بھی پاکستان میں ہی ہے۔ اس حوالے سے پاکستان کو او آئی سی میں سائنس و ٹیکنالوجی کے مرکز کی حیثیت حاصل ہے۔ بلاشبہ یہ سکول پاکستان کے مثالی تعلیمی معیار کا مظہر ”منی پاکستان “ ہے۔ میں آخر میں ایک مرتبہ پھر طلبہ و طالبات ، والدین، سکول کے سٹاف اور پاکستان کو مبارکباد پیش کرتا ہوں اور ان کے شاندار مستقبل کے لئے دعاگو ہوں۔