اسامہ کی موت حقیقت یا فسانہ؟

24 جون 2011
ڈاکٹر عبدالحق نے کہا تھا ”اگر آپ دنیا کے ایسے ادیبوں کی فہرست بنائیں جنہیں قبول عام حاصل ہو تو آپ کو معلوم ہوگا کہ دنیا میں یہ عزت انہی کو حاصل ہوئی جنہوں نے اپنے خیالات آسان اور شگفتہ زبان میں ادا کئے ہیں۔ نوجوان صحافی اور کرائم فیچرز کے نامور لکھاری اعجاز احمد بٹ کا شمار خوش قسمتی سے ایسے ہی لوگوں کی فہرست میں ہوتا ہے جو اپنے خیالات ، مشاہدات اور واقعات کو آسان اور شگفتہ الفاظ میں بیان کرتے ہیں۔ ان کی تحریر پڑھنے سے یوں محسوس ہوتا ہے کہ گویا واقعہ آپ کی آنکھوں کے سامنے ہوا ہے۔ کتاب ایک بہترین ساتھی ہوتی ہے انسان جس طرح اپنے دوستوں کا انتخاب کرتا ہے اسی طرح اس کو پوری احتیاط اور توجہ سے اچھی کتابوں کو منتخب کرنا چاہئے۔ ”اسامہ کی موت حقیقت یا افسانہ“ اعجاز احمد بٹ کی ایسی ہی ایک اچھی کتاب ہے جس میں ایبٹ آباد کی سرزمین پر پیش آنے والے واقعے کے داخلی، خارجی، امکانی اور حادثاتی زاویوں کو اجاگر کیا گیا ہے اور تہہ در تہہ چھپے ہوئے حقائق کا کھوج لگا کر عوام کے سامنے پیش کیا ہے۔ 9 ابواب پر مشتمل اس کتاب میں اسامہ بن لادن کی زندگی کے ہر پہلو کو بھی اجاگر کیا گیا ہے۔ کتاب میں کچھ نایاب تاریخی تصویریں بھی شامل ہیں204 صفحات پر مشتمل اس کتاب کے آخر میں 2002ءسے لے کر اب تک ہونے والے خودکش حملے، بم دھماکے اور دیگر جان لیوا واقعات میں جاں بحق افراد کی فہرست بھی شامل ہے۔ اس کتاب کو احمد پبلی کیشنز، ایبٹ روڈ، لاہور نے شائع کیا ہے۔ 042-36314383, 0333-4357891 (تبصرہ نگار: امتیاز احمد تارڑ)