عرس بابا فریدؒ‘ ایک لاکھ افراد نے بہشتی دروازے سے گزرنے کی سعادت حاصل کی

24 دسمبر 2009
پاکپتن (نامہ نگار+پیر امداد حسین) حضرت بابا فرید الدین مسعود گنج شکرؒ 767ویں سالانہ عرس مبارک کی تقریبات جاری ہیں۔ گذشتہ رات بہشتی دروازے کی قفل کشائی کی گئی۔ سجادہ نشین دیوان مودود مسعود چشتیؒ نے قفل کشائی کی سعادت حاصل کی۔ ایک لاکھ افراد بہشتی دروازے سے گزرے۔ بہشتی دروازہ 5سے 10محرام الحرام کی صبح تک ہر روز بعد نماز عشاءسے فجر کی نماز تک کھولا جائے گا جبکہ پولیس نے شہر کو چاروں طرف سے سیل کر دیا‘ ہسپتال جانے والی سڑک بھی ٹریفک کیلئے بند کر دی گئی جبکہ لاکھوں شہری شہر سیل کئے جانے کے باعث اپنے گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے‘ باہر رہ جانے والے زائرین دور شہریوں کو پولیس نے زبردستی اندر داخل ہونے سے روک دیا۔ جس سے لاکھوں زائرین اور شہری شدید مشکلات سے دوچار ہو گئے جبکہ پولیس نے دکانیں بند کروا دیں جس کے باعث زائرین کو کھانے پینے کی اشیا فراہمی می ںبھی شدید قلت رہی۔دریں اثناءبہشتی دروازے کی قفل کشائی کے دوران زائرین کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے دربار شریف کے اندر وحشیانہ لاٹھی چارج کیا جس سے مدینہ منورہ سے آئے ہوئے 2 افراد سمیت متعدد زائرین شدید زخمی ہو گئے۔وزیراعلیٰ نے ناقص سکیورٹی اور لاٹھی چارج کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب طارق سلیم ڈوگر کو پاکپتن میں مزید نفری بھجوانے اور سکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کرنے اور زائرین کو زیادہ سے زیادہ ریلیف پہنچانے کی ہدایات کر دی ہیں۔