پاکستان بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات آج ہونگے، مسئلہ کشمیر بھی زیربحث آئیگا

23 جون 2011
اسلام آباد / نئی دہلی (جاوید صدیق+ آئی این پی) پاکستان بھارت خارجہ سیکرٹریوں کے درمیان امن و سلامتی اور جموں وکشمیر کے موضوعات پر بات چیت آج سہ پہر ساڑھے تین بجے وزارت خارجہ میں شروع ہوگی جبکہ بھارتی وزیر خارجہ ایس ایم کرشنا نے کہا ہے کہ مذاکرات سے زیادہ توقعات وابستہ نہیں کرنی چاہئیں۔ نوائے وقت کو قابل اعتماد ذرائع نے بتایا ہے کہ بھارتی سیکرٹری خارجہ نروپما راو کی قیادت میں آٹھ رکنی وفد آج صبح اسلام آباد پہنچے گا۔ سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ مذاکرات کے آخر میں دونوں ممالک کے درمیان وفود کے تبادلے جن میں پارلیمنٹرینز کے تبادلے‘ کلچرل وفود کے تبادلوں کے بارے میں بات چیت ہوگی بھارتی سیکرٹری خارجہ حنا ربانی کھر سے ملاقات کریں گی۔ بھارتی سیکرٹری خارجہ کی صدر زرداری اور وزیراعظم گیلانی سے بھی ملاقاتیں متوقع ہیں۔ دریں اثناءصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی وزیر خارجہ نے بھارت اور پاکستان کے درمیان تمام اختلافی امور پر سیکرٹری خارجہ ملاقات میں تبادلہ خیال کی تجویز دی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ملاقات کیلئے مفروضوں سے کام لینا نہیں چاہئے جبکہ سیکرٹی خارجہ نروپماراﺅ کا کہنا تھا کہ مذاکرات میں عدم اعتماد کی فضا دور کرنے اور تعلقات کو مزید مستحکم کرنے پر بات ہو گی۔ بھارتی سفارتی ذرائع کے مطابق یوسف گیلانی اور منموہن سنگھ کے مابین نومبرمیں مالدیپ میں ہونیوالے سارک سربراہ کانفرنس کے دوران ملاقات ہوگی ،جس میں مذاکراتی عمل کے نتائج پر غورکے علاوہ بات چیت کے عمل کو مزید آگے بڑھانے اور وسعت دینے پر تبادلہ خیال کیا جائیگا جبکہ مسئلہ کشمیر پر بھی بات چیت ہوگی،ملاقات کو نتیجہ خیزبنانے کیلئے دونوں ممالک کے سفارتی چینلز سرگرم ہوگئے۔