پاکستان نے اسامہ کی بیوہ تک رسائی دے دی: امریکہ ‘ سی آئی اے کے 36 سے زائد افسروں کو ویزے دے گا‘ حکام

23 جون 2011
واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی دفتر خارجہ کے نائب ترجمان مارک سی ٹونر نے کہا ہے کہ پاکستان نے امریکی مطالبہ پر اسامہ بن لادن کی بیوہ تک رسائی دے دی ہے۔ ان کی بیواوں کو حراست میں رکھنے کا فیصلہ پاکستان کا اپنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کا مقصد طالبان کے اثر کو ختم کرنا ہے۔ اوباما نے 2009ءمیں کہا تھا افغانستان میں ہمارے قیام کا مقصد القاعدہ کو تقسیم‘ منتشر اور کمزور کر کے بالآخر ختم کرنا ہے۔ بھارتی خبررساں ادارے کے مطابق پی این ایس مہران بیس پر دہشت گردوں کے حملے کے نتیجے میں پاکستان کے 2 پی آئی سی طیاروں کی تباہی کے بعد امریکہ پاکستان کی اضافی دفاعی امداد کے لئے پاکستان کے ساتھ مذاکرات کر رہا ہے۔ امریکی دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ امریکہ ماضی میں بھی ڈیفنس آرٹیکلز پروگرام (ای ڈی اے) کے تحت پاکستان کی دفاعی امداد کے سلسلہ پی تھری سی طیاروں کی مدد فراہم کر چکا ہے‘ دفتر خارجہ نے بتایا کہ (ای ڈی اے) کے جاری پروگرام کے تحت مذاکرات میں پاکستان کو اضافی دفاعی آلات کی فراہمی کے سلسلہ میں غور کیا جا رہا ہے۔ دریں اثناءامریکی خبررساں ادارے کے مطابق پاکستانی اور امریکی حکام نے کہا ہے کہ پاکستان نے اسامہ بن لادن کی ہلاکت کے امریکی آپریشن کے بعد اعتماد کی بحالی کے اقدامات کے طور پر سی آئی اے کے 36 سے زائد افسروں کو ویزے دینے کا وعدہ کیا ہے۔ حکام نے بتایا کہ ویزے سی آئی اے کے اس سٹاف کی کمی کو پورا کرنے میں مدد دیں گے جنہیں پاکستان نے ملک چھوڑنے پر مجبور کیا تھا۔ جوائنٹ انٹیلی جنس ٹیم میں اضافی افسروں کی بھی شمولیت کی اجازت دی گئی ہے۔