بھارتی تعلیمی بورڈ نے نبی اکرم سے متعلق گستاخانہ مواد نصاب میں شامل کردیا

23 جون 2011
لکھنﺅ(آن لائن) بھارت کے تعلیمی بورڈ نے جماعت چہارم کے نصاب میں نبی اکرم حضرت محمدﷺکے متعلق گستاخانہ مواد شامل کرلیا ۔ بھارتی خبررساں ادارے کے مطابق سنی مرکز کے بانی سید مولانا ہاشمی نے کہا کہ آئی سی ایس ای بورڈ نے جماعت چہارم کے مجوزہ اخلاقیات کی تعلیم کی کتاب کے مضمون میں گستاخانہ مواد شامل کیا ہے مولانا ہاشمی نے کہا کہ کتاب کی 8 لاکھ کاپیاں فروخت کی جاچکی ہیں انہوں نے حکومت سے کہا ہے کہ وہ تین روز میں اپنی اس بڑی غلطی پر معافی مانگے اور مارکیٹ سے تمام کتابوں کو واپس منگوا ئے ورنہ عدالت جانے پر مجبور ہوں گے اور جمہوری طریقہ سے احتجاج کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ اگر یہ تصویر وفاق کے علم میں لائے بغیر شائع کی گئی ہے تو پھر بورڈ اور پبلشر کے خلاف مقدمہ درج کرایا جائے گا اسلام میں ایسی تصویر کشی کی ممانعت ہے۔ مرکز کے رکن ایس ایم سہیل نے کہا کہ ان کی تنظیم نے پہلے ہی اس حوالے سے قومی اقلیتی کمشن میں احتجاج ریکارڈ کرا رکھا ہے۔