A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

نوازشریف اداروں کو تباہ کرنے کے مشن پر ہیں: بابر اعوان‘ قائد مسلم لیگ ن مولوی نہیں ”ملا“ ہیں: فوزیہ وہاب

23 جون 2011
اسلام آباد (خبرنگار+ سٹاف رپورٹر) پیپلزپارٹی کے رہنما و سابق وزیر قانون ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا ہے کہ اداروں میں تصادم کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ مسلم لیگ ( ن ) کی رکن اسمبلی کی جانب سے چیئرمین سینٹ پر آئین کی خلاف ورزی کا الزام پارلیمنٹ پر ایک اور حملہ ہے، نوازشریف تصادم اور اداروں کی تباہی کی پالیسی پر گامزن ہیں اگر وہ قوم سے اتنے ہی مخلص ہیں تو ایوان میں آئیں۔ نوازشریف کی خواہش ہے کہ وہ ہمیشہ اقتدار میں رہیں لیکن پاکستان ایک جمہوری ملک ہے ان کی خواہش پوری نہیں ہو سکتی۔ آئندہ الیکشن میں مسلم لیگ ( ن ) کی ساری غلط فہمیاں دور ہو جائیں گی اور عوام تخت لاہور کا فیصلہ کر دیں گے، نوازشریف کی آزاد کشمیر میں انتخابی جلسوں سے تقاریر سے کشمیریوں کی30 سالہ جدوجہد کو نقصان پہنچا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ بابر اعوان نے کہا کہ چودھری نثار نوازشریف کو ایک بار پھر جدہ بھیجنا چاہتے ہیں۔ چودھری نثار، مشرف دور میں کیوں چھپے رہے۔ دریں اثناء پیپلز پارٹی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر فخرا لدین چودھری نے کہا ہے کہ صدر آصف علی زرداری نے حقائق سے پردہ اٹھایا ہے،نواز شریف اس ادارے پر انگلی اٹھا رہے ہیں جو پاکستان کی سلامتی کا ضامن ہے، صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ لینڈ مافیا کے سرپرست ہےں، انکے غیر قانونی پلازے پر کمشن بنانے کی بات کیوں نہیں کی جاتی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لاہور پریس کلب میں ایک ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر اقبال سیالوی بھی موجود تھے۔ مانیٹرنگ ڈیسک کے مطابق وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا ہے کہ آمریت کے پروردہ نوازشریف کی فوج کے خلاف ہرزہ سرائی سمجھ سے باہر ہے، جمہوریت پسند فوج کی ترجمانی ہمارا حق ہے۔ دریں اثناءشرجیل میمن نے کہا کہ نوازشریف امیرالمومنین اور شہبازشریف مفتی اعظم بننا چاہتے ہیں، عوام نے مولوی شریف برادران کو مسترد کر دیا ہے۔این این آئی کے مطابق سینیٹر بابر اعوان نے کہا نواز شریف نے امیرالمومنین بننے کیلئے پارلیمنٹ میں بل پیش کیا تھا اس لئے ان کو مولوی کہنا درست ہے۔ مانیٹرنگ ڈیسک کے مطابق پیپلز پارٹی کی ترجمان فوزیہ وہاب نے کہا ہے کہ نواز شریف مولوی نہیں بلکہ ملا نواز شریف ہیں مشکل وقت آتا ہے تو ملک چھوڑ کر بھاگ جاتے ہیں۔