مسلم لیگ (ن) کے رہنماوں نے صحافی کالونی کے پلاٹوں پر قبضے کرانے شروع کر دیئے

23 جون 2011
لاہور (خبر نگار) وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی جانب سے قبضہ مافیا کے خلاف شروع کی گئی مہم کے باوجود مسلم لیگ ( ن ) کے راہنماﺅں نے ڈی ایس پی باغبانپورہ اور ایس ایچ او ہربنس پورہ کی ملی بھگت سے صحافی کالونی کے پلاٹوں پر قبضے کروانے شروع کر دیئے ہیں۔ قبضہ گروپ کے مسلح افراد نے مزاحمت کرنے پر گزشتہ روز پریس کلب کالونی کے منیجر محمد عقیل کو حملہ کر کے شدید زخمی کر دیا اور جاتے ہوئے موبائل فون اور ہزاروں روپے بھی لوٹ کر لے گئے۔ صحافی کالونی کے بی بلاک میں قابض عبدالماجد نامی شخص نے ناجائز قبضہ برقرار رکھنے کیلئے اپنے گھر کے باہرمسلم لیگ ( ن ) کا بورڈ آویزاں کر رکھا ہے جس پر مقامی ایم پی اے اور سرکردہ راہنماوں کے نام تحریر ہیں۔ تقریباً ڈیڑھ ہفتہ قبل قبضہ گروپ کے سرغنہ عبدالماجدنے کلب کے سینئر رکن اختر حیات کے پلاٹ پر ناجائز قبضہ کرنے کی کوشش کی جس کی تھانہ ہربنس پورہ میں درخواست دی گئی مگر پولیس نے تاحال مقدمہ درج نہیں کیا۔ 20 جون کو سکیورٹی گارڈ فدا حسین کالونی میں ڈیوٹی کر رہا تھا کہ عبدالماجد اور اس کے مسلح ساتھیوں نے اسے شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔ گزشتہ روز کالونی کا منیجر محمد عقیل اور سکیورٹی گارڈ فدا حسین موٹر سائکل پر کالونی سے کلب جا رہے تھے کہ کالونی کے گیٹ سے کچھ فاصلے پر قبضہ مافیا کے سرغنہ عبدالماجد کے ایما پر اس کے آتشیں اسلحہ سے مسلح نصف درجن سے زائد ساتھیوں نے حملہ کر کے دونوں کو زخمی کر دیا اور جاتے ہوئے سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے ہوئے کلب کے 67 ہزار روپے اور موبائل فون بھی چھین کر لے گئے ملزموں کے خلاف تھانہ ہربنس پورہ میں مقدمہ اندارج کی درخواست دے دی گئی ہے۔ لاہور پریس کلب کے صدر سرمد بشیر، نائب صدر زاہد عابد، سیکرٹری اعظم چودھری، خزانچی افضال طالب اور گورننگ باڈی کے اراکین نے قبضہ مافیا کی اس کارروائی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک جانب وزیر اعلیٰ قبضہ مافیا کے خلاف کاروائی کی مہم کا دعویٰ کر رہے ہیں جبکہ دوسری جانب انہی کی پارٹی کے منتخب نمائندے صحافی کالونی پر قبضے کروا رہے ہیں۔