امریکہ‘ بھارت دفاعی معاہدے سے پاکستانی حکمرانوں کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں: منور حسن

23 جولائی 2009
لاہور (خصوصی رپورٹر) امیر جماعت ا سلامی پاکستان سید منور حسن نے کہا ہے کہ امریکہ کو قابل اعتماد دوست تصور کرنے والے پاکستانی حکمران خود فریبی میں مبتلا ہیں۔ امریکہ اور بھارت کے درمیان ہونے والے حالیہ بڑے دفاعی معاہدے سے ان کی آنکھیںکھل جانی چاہئیں ۔ امریکہ پاکستان کے ازلی دشمن کوبھاری اسلحہ ، لڑاکا طیارے دے کر اسے مضبوط کر رہا ہے جبکہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کورول بیک کرنے کے لیے پاکستان کے گرد گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے۔ دہشت گردی کے خلاف امریکی مفادات میں جھونکنے کا سلسلہ فوری بنداور امریکی اتحاد سے باہر نکلنے کا اعلان کیاجائے۔ عوام ’’گو امریکہ گو‘‘ تحریک کا ساتھ دیں۔ گزشتہ روز منصورہ میں وفود سے باتیں کرتے ہوئے سید منورحسن نے مزید کہا ہے کہ پاکستان آٹھ سال سے اپنی سرزمین پر اپنے ہی لوگوں سے امریکی جنگ لڑ رہا ہے۔ افغانستان پر امریکی حملے کے دوران پرویز مشرف نے امریکہ کو پاکستان کے ہوائی اڈے، فضائی اور لاجسٹک سہولت تک فراہم کردی، اس کے بدلے صلہ ملا کہ افغانستان سے نکل کر پاکستان کو نشانہ بنایا گیا۔ حکمران مکمل طور پر امریکی ڈکٹیشن پر چل رہے ہیں اور اپنے ہی ہاتھوں ملک کوتباہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیںامریکی شکنجے سے نکل آنا چاہیے اور خطے میںپاکستان ،چین اورایران کوسٹریٹجک پارٹنر بننا چاہیے۔