A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

پنجاب بھر میں بارشیں: لاہور میں چھتیں گرنے سے دو درجن افراد زخمی

23 جولائی 2009
لاہور (خبرنگار + نامہ نگار + نمائندگان) پنجاب کے اکثر علاقوں میں موسلادھار بارشوں کے باعث موسم خوشگوار ہو گیا۔ لاہور کے مختلف علاقوں میں چھتیں گرنے سے 2 درجن سے زائد جبکہ موٹر سائیکل پھسلنے سے درجن سے زائد شہری زخمی ہو گئے جن میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔ بارش کے باعث سیالکوٹ کے نشیبی علاقے زیر آب آ گئے اور گٹر ابل پڑے۔ نورپور تھل میں بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق سندھ اور بلوچستان میں مزید بارش کا سلسلہ آج سے شروع ہونے کا امکان ہے جبکہ لکی مروت میں چھت گرنے سے ایک 7 سالہ بچی جاں بحق جبکہ اسکی 3 سالہ بہن شدید زخمی ہو گئی۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت کے مختلف علاقوں میں بارش اور آندھی کے باعث چھتیں گرنے سے دو درجن سے زائد افراد ملبے تلے دب کر زخمی ہو گئے۔ ٹھوکر نیاز بیگ کا مشتاق احمد کے اہل خانہ گھر میں سو رہے تھے کہ بوسیدہ مکان کی چھت زور دار دھماکے سے گرگئی۔ جس سے ملبے تلے دب کر 8 افراد مشتاق احمد اس کی بیوی اقبال بانو،سردار بیگم،شہناز ،اقصیٰ ،عدنان ،بلال اور غلام حسین شدید زخمی ہو گئے۔ ریلوے سٹیشن پر ریلوے انکوائری آفس117کی بوسیدہ چھت گرنے سے شازیہ بی بی ، ریحانہ بی بی اور اشرف جان زخمی ہو گئے۔ گجر پورہ کے علاقہ چائنہ سکیم میں جمشید کے گھر کی چھت گر نے سے ملبے تلے دب کر جمشید اس کی بیوی کلثوم بی بی اور بیٹا فرید زخمی ہو گئے۔ ساندہ کے علاقہ راج گڑھ میںچھت گرنے سے شمیم بی بی، منیر ، وحید اور جمیل ملبے تلے دب کر زخمی ہو گئے۔ مختلف علاقوں میں موٹر سائیکل پھسلنے سے درجن سے زائد افراد 24 سالہ طاہر‘ 18 سالہ شان‘ 20 سالہ خرم‘ 30 سالہ ہارون اور اسکی بیوی فرزانہ وغیرہ زخمی ہو کر ہسپتال پہنچ گئے۔ بارش سے لاہور کی پوش آبادیوں میں کھڑا ہونیوالا پانی واسا نکالنے میں ناکام رہا جبکہ پکی ٹھٹھی‘ الممتاز سینما روڈ شام کو سورج ڈھلنے کے بعد بھی پانی کھڑا ہونے سے ٹریفک کیلئے بند تھی۔ ڈی جی ایل ڈی اے عمر رسول نے بارش کے دوران ڈسپوزل سٹیشنوں کی نگرانی پر مامور افسران سے ان کی عدم موجودگی پر جواب طلبی کر لی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق لاہور شہر میں 82 ملی میٹر جبکہ ایئر پورٹ پر50 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ بارش سے نشیبی علاقوں اور سڑکوں پر پانی کھڑا ہو گیا ہے جس سے ٹریفک کا نظام بھی متاثر ہوا۔ لاہور اور گردونواح میں مطلع ابرآلود رہنے اور مزید بارش ہونے کا امکان ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق بارش برسانے والی ہوائوں کا شدید دبائو گزشتہ روز خلیج بنگال سے مغرب کی طرف مڑ گیا اور اب بھارتی ریاست اڑیسہ کے شمالی علاقے پر ہے۔ امکان ہے کہ ہوا کا یہ شدید دبائو مغرب کی طرف مزید بڑھے گا اور بتدریج کمزور ہوتا جائے گا محکمہ موسمیات کے مطابق اس تناظر میں پاکستان کے مختلف حصوں میں بارشیں متوقع ہیں۔ کشمیر اور شمالی علاقہ جات میں دو سے تین روز کے دوران مختلف مقامات پر گرج چمک کے ساتھ بارش ہو سکتی ہے، پنجاب اور وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں بھی آئندہ دو روز کے دوران گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔