حملے: طورخم بارڈر سے نیٹو کو سامان کی ترسیل میں 10فیصد تک کمی

23 جولائی 2009
پشاور ( آن لائن ) پاک افغان طورخم بارڈر سے افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کو سامان کی ترسیل میں 10 فیصد تک کمی واقع ہو گئی ہیں ۔ پشاور میں واقع 8 ٹرمینل بند ہو گئے ہیں جبکہ ان ٹرمینلوں میں کام کرنے والے سینکڑوں ملازمین کو فارغ کر دیا گیا ہے۔ گزشتہ دو سالوں کے دوران خیبر ایجنسی اور پشاور میں نیٹو افواج کے سامان سپلائی کرنے والے ٹرمینلوں پر 120سے زائد حملے ہو چکے ہیں جبکہ تیل سپلائی کرنے والے گاڑیوں پر 8 سو حملے ہو چکے ہیں ان حملوں کے بعد زیادہ تر ٹرمینل پشاور سے پنجاب منتقل ہو گئے تھے۔ ذرائع نے بتایا کہ صوبہ بلوچستان میں چمن کے راستے اور وسطی ایشیاء کے راستوں سے نیٹو افواج کو سامان کی ترسیل میں اضافہ ہو چکا ہے جس کے باعث پاک افغان طورخم بارڈر سے اس میں کمی آگئی ہے۔
سامان ترسیل کمی