ایران کیخلاف اتحادیوں کے دفاعی نظام کو جدید بنائیں گے: ہلیری

23 جولائی 2009
بنکاک (مانیٹرنگ نیوز+ ایجنسیاں) امریکہ نے کہا ہے کہ وہ ایرانی ایٹمی پروگرام کے پیش نظر خطے میں اپنے اتحادی ممالک کے دفاعی نظام کو جدید بنانے پر تیار ہے۔ اس صورت میں ایران محفوظ نہیں رہے گا۔ امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن نے تھائی لینڈ کے سرکاری ٹی وی کو انٹرویو میں کہا کہ ایران کے ساتھ مذاکرات کیلئے امریکہ کے دروازے کھلے ہیں لیکن ایرانی ایٹمی پروگرام کا تنازعہ اپنی جگہ موجود ہے۔ اگر ایران ایٹمی پروگرام سے پیچھے نہیں ہٹا تو امریکہ خطے میں اپنے اتحادی ممالک کے دفاعی نظام کو جدید بنانے کیلئے تیار ہے۔ ایرانی حکومت کو سمجھنا چاہئے کہ اگر امریکہ نے خطے میں دفاعی نظام پھیلایا تو ایران محفوظ نہیں رہے گا۔ اس سے پہلے صحافیوں سے گفتگو کے دوران امریکی وزیر خارجہ نے شمالی کوریا اور میانمار کی فوجی حکومت کے درمیان بڑھتے ہوئے تعلقات اور فوجی تعاون پر تشویش ظاہر کی۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سے خطے میں عدم استحکام پیدا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ عراق افغان جنگ کے باوجود ایشیا کے ساتھ مستحکم اور قریبی تعلقات کا خواہاں ہے اور اس سلسلے میں ہم مثبت پیشرفت بھی کر رہے ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن نے کہا ہے کہ امریکہ اپنے اتحادیوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گا اور جنوب مشرقی ایشیا کے ممالک کے دفاع کو مزید مضبوط بنایا جائے گا۔ تھائی لینڈ کے سرکاری ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ امریکہ شمالی کوریا کی جانب سے جنوب مشرقی ایشیا کے ممالک کو دی گئی دھمکیوں کا سخت نوٹس لے گا اور ان ممالک کے دفاعی نظام میں بھرپور معاونت کرے گا۔ ان ممالک کے عوام بالکل مطمئن رہیں۔ امریکہ اس مشکل گھڑی میں انکا ساتھ کبھی نہیں چھوڑے گا۔