مشرف پریشان‘ قانونی مشیروں سے مشورے:خود پیش نہ ہونے کا فیصلہ کر لیا ‘ ذرائع

23 جولائی 2009
اسلام آباد (مانیٹرنگ سیل + ا یجنسیاں) سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف نے سپریم کورٹ کی طرف سے نوٹس جاری ہونے کے بعد سینئر قانون دان سید شریف الدین پیرزادہ اور سابق اٹارنی جنرل ملک قیوم سے رابطہ کیا اور ان سے عدالتی کارروائی کے حوالے سے مشورے لئے۔ نجی ٹی وی کے مطابق طلبی کے فیصلے پر پرویز مشرف پریشانی کا شکار ہو گئے ہیں۔ سابق صدر نے حکومت کے اس فیصلے پر کہ وہ ان کا دفاع نہیں کرے گی سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق پرویز مشرف نے جان کو خطرے کے پیش نظر خود عدالت میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے ان کی جگہ سابق صدر کے دو وکیل پیش ہونگے۔ آن لائن کے مطابق مشرف نے کہا کہ خالد رانجھا‘ ایس ایم ظفر اور دیگر شخصیات سے بھی رابطے کئے ہیں۔