A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

وزیراعلیٰ نے سینئر ڈاکٹروں کو مستقل کرنے کا حکم دیدیا‘ لوڈشیڈنگ پر مظاہروں کا نوٹس‘ کمیٹی بنا دی

23 جولائی 2009
بہاولپور/ چشتیاں/ حاصل پور/ لاہور (نامہ نگاران+ خصوصی رپورٹر+ ایجنسیاں+ مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب میں پسماندگی دور کرنے کیلئے انقلابی تبدیلیاں لا رہے ہیں۔ بہاولپور ڈویژن سمیت جنوبی پنجاب میں ہونے والے ترقیاتی کاموں کی رفتار اور معیار کی براہ راست خود نگرانی کرونگا جس کیلئے چیف منسٹر سیکرٹریٹ میں ایک خصوصی سیل قائم کر دیا گیا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے وسائل کا رُخ جنوبی پنجاب کی طرف موڑ دیا ہے۔ جنوبی پنجاب کے عوام ہمیں اپنے سے جُدا نہ سمجھیں‘ بنیادی مسائل حل کرنے کیلئے بھرپور توجہ دی جائیگی۔ وزیراعلیٰ نے جھنگ اور فیصل آباد میں لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج کے دوران سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے‘ واپڈا کے دفاتر پر حملے کرنے اور ٹرین کو آگ لگانے کے واقعات کا نوٹس لیتے ہوئے ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دیدی ہے جبکہ وزیراعلیٰ نے سینئر ڈاکٹروں کو مستقل کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔ محکمہ صحت کے ترجمان نے کہا ہے کہ اس سے 2 ہزار ڈاکٹروں کو فائدہ ہو گا گریڈ 18میں تمام کنٹریکٹ سپیشلسٹ کو بھی مستقل کردیا گیا ہے۔ پوسٹ گریجویٹ ٹرینی ڈاکٹرز جو پی آر ایس پی‘ ایم این سی ایچ یا دیگر پروگراموں میں فرائض سرانجام دے رہے ہیں انکو بھی مستقل کرنے کا حتمی فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ شہبازشریف نے کہا ہے کہ تشدد آمیز مظاہرے اور توڑپھوڑ پر مبنی احتجاج عوامی مسائل کا حل نہیں۔ پنجاب کے امن پسند عوام کو پُرتشدد مظاہروں سے مدد رہنا چاہئے‘ لوڈشیڈنگ کے حل کیلئے وفاقی حکومت سے مستقل رابطے میں کبھی کمی نہیں آنے دی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز چشتیاں اور حاصل پور میں دانش سکولوں کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب‘ بہاولپور میں مختلف اداروں کی طرف سے دی جانے والی بریفنگ کے بعد خطاب اور بہاولپور ڈویژن کے بار ایسوسی ایشن کے وکلا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ نے سرکٹ ہائوس بہاولپور میں بہاولپور ڈویژن بار ایسوسی ایشنز کے عہدیداروں سے ملاقات کے دوران ڈسٹرکٹ کورٹس بہاولپور میں سڑکوں کی تعمیر‘ لائبریری کی بہتری اور واٹر فلٹریشن پلانٹ کی تنصیب کی منظوری دی اور کمشنر بہاولپور کو وکلا کالونی کے بارے میں 3روز جبکہ بہاولپور ڈویژن کے تمام اضلاع کی بارز کے مسائل کا جائزہ لے کر جامع رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔ علاوہ ازیں بہاولنگر میں اسلم کے ہاتھوں قتل ہونے والے حاجی رمضان کے بھائی حافظ منیر سے ملاقات کے دوران شہباز شریف نے کہا کہ اگر پولیس اپنے فرائض ذمہ داری سے ادا کرے تو مقتولین کے وارثوں کو قاتلوں کی تلاش میں شہر در شہر خوار نہ ہونا پڑے۔ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کے دوران وزیراعلیٰ نے کہا کہ دانش سکول سسٹم پاکستا ن بھر کی بہترین تعلیمی درسگاہ کے ہم پلہ ہو گا۔ اس منصوبہ پر 70ملین روپے خرچ ہونگے‘ ذہین بچے اور بچیوں کو مفت تعلیم اور رہائش دی جائیگی۔ انہوں نے چیف سیکرٹری پنجاب کو ہدایت کی کہ دانش سکول سسٹم کیلئے بہترین ٹیچرز کا انتخاب کیا جائے اور ان پراجیکٹ کو جلدازجلد مکمل کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ جنوبی پنجاب میں صحت مند پانی کی فراہمی‘ فری ایجوکیشن اور ترقیاتی منصوبوں پر عمل شروع ہوگیا ہے تاکہ جنوبی پنجاب کی محرومیوں کا خاتمہ ہو سکے۔ انہوں نے آئی جی پنجاب کو ہدایت کی ہے کہ پانی چوری کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ پنجاب نے بہاولنگر‘ چشتیاں‘ حاصل پور روڈ کی تعمیر و کشادگی کا سنگ بنیاد رکھا۔ اس پر ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت آئے گی۔ حاصل پور میں دانش سکول کے سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے شہبازشریف نے کہاکہ جنوبی پنجاب کے مسائل حل کرنے پر خصوصی توجہ اور ترقیاتی کاموں کیلئے اربوں روپے کی گرانٹ دی جا رہی ہے۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ نے بہاولپور میں وکلا سے بات چیت کرتے ہوئے انہیں آزاد عدلیہ کی بحالی پر مبارکباد دی ۔ انہوں نے کہاکہ وکلا‘ سیاسی کارکنان اور سِول سوسائٹی نے عدلیہ کی بحالی میں اپنا مثالی کردار ادا کیا۔ اے پی پی کے مطابق وزیراعلیٰ آج رحیم یار خان کے دورہ کے دوران متعدد میگا پراجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ علاوہ ازیں قائداعظم میڈیکل کالج کے بورڈ آف مینجمنٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ عوام کو ہسپتالوں میں سہولتوں کی فراہمی کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔ وزیراعلیٰ سے سرکٹ ہائوس بہاولپور میں پارٹی ورکروں نے ملاقات کی۔ شہبازشریف نے کہا کہ ورکر ہمارا سرمایہ ہیں۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ نے صوبہ میں بجلی کے بحران کے خلاف عوامی احتجاج کے معاملات کو دیکھنے کے لئے سینئر ایڈوائزر ذوالفقار علی کھوسہ سربراہی میں وزارتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔ کمیٹی کے ارکان میں سینئر وزیر راجہ ریاض احمد‘ وزیر قانون رانا ثنا اللہ‘ وزیراعلیٰ کے مشیر جہازیب برکی‘ چیئرمین وزیراعلیٰ ٹاسک فورس برائے پاور جنریشن ندیم بابر‘ چیف ایگزیکٹو آفیسر پیپکو‘ لیسکو اور فیسکو کے چیف ایگزیکٹو آفیسر‘ ایڈیشنل چیف سیکرٹری‘ ہوم سیکرٹری‘ آئی جی پنجاب اور دیگر شامل ہیں۔ کمیٹی امن و امان کی صورتحال کو کنٹرول میں رکھنے کے لئے پیشگی اقدامات کی نشاندہی کرے گی۔ کمیٹی ایک طرف تاجروں اور صنعت کاروں کی تنظیموں کے ساتھ مذاکرات بھی کرے گی جبکہ دوسری طرف بجلی کی ڈسٹری بیوشن کمپنیوں سے بات چیت بھی کرے گی۔ علاوہ ازیں کمیٹی کا اجلاس سردار ذوالفقار کی سربراہی میں منعقد ہوا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ جھنگ میں ہونے والے واقعات کی منصوبہ بندی کا عنصر موجود ہے جسے نظرانداز نہیں کیا جا سکتا۔ رحیم یار خان سے بیورو رپورٹ کے مطابق وزیراعلیٰ شہبازشریف آج رحیم یار خان میں جلسہ سے خطاب کرینگے اور متعدد منصوبوں کا افتتاح بھی کرینگے جبکہ گذشتہ روز جھنگ میں پُرتشدد واقعات کی تحقیقات کیلئے تشکیل کردہ 2رکنی کمیٹی نے سرکٹ ہائوس جھنگ میں اوپن فورم تفصیلات حاصل کیں۔