بنکوں کی جانب سے زرعی شعبوں کو قرضے کی فراہمی میں 10 فیصد اضافہ

23 جولائی 2009
کراچی (ثناء نیوز) مالی سال 2008-09ء کے دوران کمرشل اور اسپیشلائزڈ بینکوں کی جانب سے زرعی شعبے کو قرضوں کی فراہمی سالانہ بنیاد پر 10.14 فیصد اضافے کے ساتھ 233.01 بلین روپے تک پہنچ گئی۔ مالی سال 2007-08ء کے دوران زرعی شعبے کو 211.561 بلین روپے کے قرضے فراہم کئے گئے تھے۔ اس طرح مالی سال 2008-09ء کے دوران زرعی شعبے کو قرضوں کی فراہمی میں 21.449 بلین روپے کا اضافہ ہوا۔ پانچ بڑے کمرشل بینکوں الائیڈ بینک لمیٹڈ، حبیب بینک لمیٹڈ، ایم سی بی بینک لمیٹڈ، نیشنل بینک آف پاکستان اور یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ کی جانب سے جولائی 2008ء سے جون 2009ء تک کے عرصے کے دوران مجموعی طور پر 110.666 بلین روپے کے زرعی قرضے فراہم کئے گئے جبکہ مالی سال 2007-08ء کے دوران ان پانچ بینکوں نے زرعی شعبے کو 94.749 بلین روپے کے قرضے فراہم کئے تھے۔ واضح رہے کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے مالی سال 2008-09ء کے لئے زرعی قرضوں کی فراہمی کا ہدف 250 بلین روپے تجویز کیا تھا۔ معیشت اور مارکیٹ کے مشکل حالات کے باوجود بینک حالیہ مالی سال کے دوران 93 فیصد سے زائد ہدف حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔