کراچی میں ڈاکٹرعارف کے قتل کے دوسرے روز بھی عباسی شہید اسپتال میں ڈاکٹروں نے احتجاج کیا اور قاتلوں کی گرفتاری تک علامتی ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کردیا

23 دسمبر 2014 (16:48)

نارتھ کراچی میں تین روزقبل نامعلوم افراد کی فائرنگ کا نشانہ بننے والےمقتول ڈاکٹر عارف کے بہیمانہ قتل کے خلاف دوسرے روز بھی عباسی شہید اسپتال کے ڈاکٹرز سراپا احتجاج رہےاور او پی ڈی بند کردی جس سے مریضوں کومشکلاتکاسامنا کرناپڑا،میڈیا سے بات کرتےانچارج شعبہ حادثات ڈاکٹر نعیم کاکہنا تھا کہ مقتول ڈاکٹر کو آٹھ ماہ سےتنخواہ بھی ادا نہیں کی گئی تھی،واجبات کی ادائیگی کوبھی یقینی بنایاجائےانہوں نےمطالبہ کیا  کہ عباسی شہید کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کوفوری طورپر معطل اور ڈاکٹروں کوتحفظ فراہم کیا جائے،ڈاکٹر نعیم کے ایم سی کی ڈائریکٹر صحت سلمیٰ کوثرنےمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مقتول ڈاکٹر کےبقایا جات کی ادائیگی جلد کر دی جائے گی جبکہ انکے گھر سے کسی ایک فرد کو ملازمت بھی دی جائے گیجس پر ڈاکٹروں نے احتجاج ختم کر دیا