جیلوں پر دہشت گردوں کے حملوں کا خطرہ ہے: وزارت داخلہ نے صوبوں کو آگاہ کر دیا

23 دسمبر 2014
جیلوں پر دہشت گردوں کے حملوں کا خطرہ ہے: وزارت داخلہ نے صوبوں کو آگاہ کر دیا

اسلام آباد + لاہور (سٹاف رپورٹ+ آن لائن + نامہ نگار) وفاقی وزارت داخلہ نے انتہائی مطلوب قیدیوں کی پھانسی کی سزائوں کے بعد دہشت گردوں کے جیلوں پر حملہ کے حوالے سے چاروں صوبوں کو آگاہ کر دیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق پیر کے روز وفاقی وزارت داخلہ کی جانب سے چاروں صوبائی محکمہ داخلہ کو آگاہ کر دیا گیا ہے کہ ملک بھر میں انتہائی مطلوب قیدیوں کی پھانسیوں کی سزائوں پر عملدرآمد کے بعد جیلوں پر دہشت گردوں کے حملے کا خطرہ ہے اس لئے تمام صوبے جیلوں کی سکیورٹی کو ہائی الرٹ اور سخت کر دیں تا کہ کسی بھی جارحیت کا ڈٹ کر مقابلہ کیا جا سکے اور دہشت گردوں کو حملے کا منہ توڑ جواب دیا جا سکے۔ علاوہ ازیں قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اطلاع دی ہے کہ دہشت گردوں نے پولیس وردی میں ملبوس ہوکر اہم شخصیات، سرکاری تنصیبات اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر خودکش حملوں کی منصوبہ بندی کی ہے۔ ذرائع کے مطابق حساس اداروں نے محکمہ داخلہ پنجاب کو وارننگ جاری کی ہے کہ وزیراعظم کی رہائش گاہ، وزیراعلیٰ ہائوس، سول سیکرٹریٹ، جی آر اوز، آئی جی پنجاب پولیس آفس و دیگر قانون نافذ کرنے والے حساس اداروں اور جن جیلوں میں دہشت گرد موجود ہیں وہاں پولیس وردیوں میں ملبوس دہشت گرد سکیورٹی کے بہانے اندر داخل ہوکر خودکش دھماکے کرسکتے ہیں جس پر وہاں سکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔ ادھر دہشت گردوں کی طرف سے مسلح افواج کے رہائشی علاقوں کو نشانہ بنائے جانے کے خدشات ہیں جس کے بعد ان علاقوں کی سیکورٹی بڑھا دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق پشاور میں ائر فورس کے بعض رہائشی علاقوں کو خالی بھی کرایا گیا ہے۔ علاوہ ازیں ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس راولپنڈی ریجن اختر عمر حیات لالیکا نے راولپنڈی، اٹک، جہلم اور چکوال کی پولیس سربراہان کو پیر کے روز ایک مراسلہ جاری کیا ہے جس میں ان سے کہا گیا ہے کہ آپ کے اضلاع میں جتنے لوگ بھی پاک آرمی، ائر فورس، پاکستان رینجرز، پولیس اور دیگر فورسز کے یونیفارم کی خرید و فروخت کا کام کرتے ہیں ان کو سختی سے پابند کیا جائے کہ وہ کسی بھی شخص کو بغیر تصدیق کے کسی قسم کا یونیفارم فروخت نہ کریں گے۔ این این آئی کے مطابق خیبر پی کے میں سرکاری اداروں کو آرمی پبلک سکول پر حملے کے خطرے کی پیشگی اطلاع دی جا چکی تھی۔ نجی ٹی وی کے مطابق تحریری انتباہ 28 اگست 2014ء کو جاری کیا گیا تھا جس میں سکیورٹی اقدامات کرنے کی ہدایت کی گئی تھی۔