حکم امتناعی ختم، سندھ ہائیکورٹ نے دو نئے ایٹمی بجلی گھر تعمیر کرنے کی اجازت دیدی

23 دسمبر 2014

کراچی (نوائے وقت رپورٹ) سندھ ہائیکورٹ نے 2 نئے ایٹمی بجلی گھروں کی تعمیر کی اجازت دیدی۔ نئے ایٹمی بجلی گھروں کی تعمیر کا کام جاری رکھنے کا حکم دیا ہے۔ تعمیرات پر حکم  امتناعی ختم کردیا گیا ہے۔عدالت نے سندھ انوائرنمنٹل پروٹیکشن کمیٹی (ایس ای پی اے) کو ہدایت کی کہ ترمیم شدہ ماحولیاتی جائزہ کے اثرات کا 2014ء کے قواعد کے مطابق 90 روز کے اندر ازسرنو جائزہ لے۔ پی اے ای سی کے وکیل انور مسعود خان نے اپنا مقدمہ پیش کیا اور ان منصوبوں کی قانونی حیثیت کے بارے میں حقائق پر روشنی ڈالی ، انہوں نے بتایا کہ ملکی ماحولیاتی قوانین کے مطابق کام کیا جارہا ہے۔ عدالت نے آخرکار دو پلانٹس تعمیر کرنے کی اجازت دیدی اور پٹیشن نمٹادی ۔ ان دو پلانٹس کی تعمیر جلد شروع ہونے کی توقع ہے۔ پروجیکٹ منیجر اظفر منہاج نے بتایا کہ ہم خوش ہیں کہ آخرکار پاکستان کے تمام قوانین کے مطابق ہم K2 اور K3پلانٹس پر کام کا آغاز کرسکیں۔