پشاور: شہید ڈرائیور کی شناخت ہوگئی، تفتیش میں اہم پیشرفت، کئی گرفتاریاں

23 دسمبر 2014

پشاور (بیورو رپورٹ+ بی بی سی ڈاٹ کام) آرمی پبلک سکول میں شہید ڈرائیور کا شناختی کارڈ مل گیا جس سے احسان اللہ کی شہادت کی تصدیق ہو گئی شہید ڈارئیور نے دو ماہ کا بیٹا بھی سوگوار میں چھوڑا ہے اس بات کی تصدیق پشاور کے صحافی نے متاثرہ سکول کی کوریج کے دوران شہید کے شناختی کارڈکی کاپی ملنے کے بعد ان کے گھر سے رابطہ کے بعد کی۔ احسان اللہ آرمی پبلک سکول کی خاتون ٹیچر حضرا یاسمین کا ڈرائیور تھا۔ دوسری جانب آرمی پبلک سکول کے زیر علاج تین بچوں کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ علاوہ ازیں آرمی پبلک سکول کی دیواریں 10فٹ اونچی کرنے کا کام شروع کر دیا گیا، دیوار پر 2فٹ اونچی خاردار تاریں بھی لگائی جائیں گی۔ تفصیلات کے مطابق پیر کو ورسک روڈ پر واقع آرمی پبلک سکول کی دیواریں 10فٹ اونچی کرنے کا کام شروع کر دیا گیا۔ ذرائع کے مطابق دیوار پر 2فٹ اونچی خاردار تاریں بھی لگائی جائیں گی۔ واضح رہے کہ 16دسمبر کو آرمی پبلک سکول میں عقبی دیوار پھاند کر دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا اور بربریت کی تاریخ رقم کرتے ہوئے بچوں سمیت 142 افراد کو شہید کردیا  تھا۔