تھر میں معصوم بچوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار سخت سزا کے مستحق ہیں: ممتاز بھٹو

23 دسمبر 2014

لاڑکانہ(نامہ نگار) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما سردار ممتاز علی خان بھٹو نے کہا ہے کہ پشاور میں معصوم بچوں کے قتل عام پر جتنا بھی دکھ و افسوس کا اظہار کیا جائے وہ کم ہے۔ ملوث مجرم سخت سزا کے مستحق ہیں لیکن برسوں سے ایسے ہی معصوم بچے خواتین اور مرد بھوک‘ پیاس اور ادویات کی کمی کی وجہ سے سینکڑوں کی تعداد میں موت کا شکار ہورہے ہیں جس کے ذمہ داروں پر کسی نے انگلی تک نہیں اٹھائی۔ کیا یہ انسان نہیں جنگلی جانور تھے جن کی ہلاکتوں کا کسی کو بھی احساس نہیں؟ تھر کی صورتحال کی ذمہ داری دہشت گردوں پر نہیں بلکہ رشوت خور‘ نالائق حکمرانوں اور افسر شاہی پر عائد ہوتی ہے جنہیں کسی نے سزا تو نہیں دی بلکہ پوچھا تک نہیں ہے اور وہ بدستور عوامی خزانے پر ہر قسم کے مزے لیتے ہوئے کسی کی پرواہ کئے بغیر عیاشیاں کررہے ہیں۔ انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان اور افواج پاکستان کے سربراہ سے پر زور اپیل کی کہ تھر میں قتل کی جامع تحقیقات کرواکے مجرموں کو ہی سزا دی جائے جو پشاور میں معصوم بچوں کے قاتلوں اور ان کے ساتھیوں کو دی جارہی ہے۔