گورنر مکہ نے حج انتظامات کوتسلی بخش قرار دیدیا

22 نومبر 2009 (14:10)
مکہ مکرمہ (مبشر اقبال لون استادانوالہ سے) گورنر مکہ مکرمہ و سربراہ مرکزی حج کیمٹی شہزادہ خالد الفیصل بن عبدالعزیز نے اعلان کیا ہے کہ شعائر مقدسہ منیٰ\\\' مزدلفہ اور عرفات میں تمام حج انتظامات تسلی بخش اور قابل تعریف ہیں۔ وہ شعائر مقدسہ کا دورہ کرنے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کررہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ میں نے اس دورے کے موقع پر جو کچھ دیکھا اس سے دلی سکون محسوس ہوا۔ سعودی حکومت نے حج شعائر کی ادائیگی کو انتہائی آسان بنانے کیلئے شعائر مقدسہ میں زبردست انتظامات کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری قیادت چاہتی ہے کہ مہمانان حرم کی ضیافت شایان شان طریقے سے ہو اور وہ ارض مقدس میں ایمان افروز روحانی اور اسلامی ماحول میں اپنی زندگی کے حاصل ایام گزاریں۔ شہزادہ خالد الفیصل نے دورے کا آغاز جمرات کے پل سے کیا۔ اس کی پانچوں منزلیں تیار ہوچکی ہیں۔ بعدازاں انہوں نے شعائر مقدسہ ٹرین کیلئے مختص راستے کا معائنہ کیا۔ یہ ٹرین جزوی طور پر 1431ھ میں چلائی جائیگی۔ گورنر مکہ مکرمہ منیٰ سے عرفات گئے اور وہاں سیلاب کے پانی کی نکاسی کے منصوبے کے دوسرے مرحلے اور بعض پہاڑیوں اور اونچی جگہوں کو ہموار کرنے والے منصوبے کا بھی معائنہ کیا۔ اسکی بدولت میدان عرفات میں تقریباً 10 لاکھ مربع میٹر کا اضافہ ہوا ہے جس سے عازمین حج فیضیاب ہونگے۔ یہاں سے وہ بس شٹل سروس منصوبے کے تیسرے مرحلے کے معائنے کیلئے پہنچے۔ انہوں نے منیٰ الوادی ہسپتال کا معائنہ کیا جو جدید ترین طبی آلات سے آراستہ ہے۔ انہوں نے شعائر مقدسہ میں سڑکوں اور مختلف سیکٹرز کی نمبرنگ اور ان کے ناموں کے اندراج کے منصوبے کا بھی جائزہ لیا۔ اس کی بدولت شعائر مقدسہ کے ہر حصے کا ایک نام اور نمبر ہوگا جس کی وجہ سے عازمین کو ایک جگہ سے دوسری جگہ آنے جانے میں سہولت ہوگی۔ انہوں نے ایمرجنسی آپریشن روم اور مکہ مکرمہ میونسپلٹی کے ماتحت انسداد ڈینگی بخار سینٹر کا بھی معائنہ کیا۔ مزدلفہ میں واقع مکہ مکرمہ گورنریٹ کے دفتر گئے اور وہاں مرکزی حج کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کی۔