کامرہ میں تیار ہونیوالا پہلا جے ایف 17تھنڈر طیارہ کل رول آﺅٹ ہو گا

22 نومبر 2009
اسلام آباد (جاوید صدیق) کامرہ ایروناٹیکل کمپلیکس میں تیار ہونے والا پہلا جے ایف 17تھنڈر کل (پیر) رول آﺅٹ ہو گا۔ پاک فضائیہ کے سربراہ ائرچیف مارشل راﺅ قمر سلیمان نے نوائے وقت کو خصوصی ملاقات میں بتایا کہ پریسلر ترمیم کے تحت امریکہ سے ایف 16طیاروں پر پابندی کے بعد پاکستان نے اپنے سچے دوست چین سے رابطہ کیا تھا۔ یوں اس منصوبے کا آغاز ہوا۔ 1990ءمیں شروع ہونیوالی جدوجہد کا پہلا پھل چین میں تیار شدہ 2طیاروں کی شکل میں 2007ءمیں ملا جبکہ 6طیارے 2008ءمیں موصول ہوئے۔ کامرہ میں تیار ہونیوالے پہلے طیارے میں 20فیصد پرزہ جات پاکستان میں تیار ہوئے ہیں جبکہ 40ویں طیارے کی تیاری تک چین ٹیکنالوجی پاکستان کو منتقل کر دیگا۔ جس کے بعد 58فیصد طیارہ یہاں تیار ہو گا۔ انہوں نے بتایا کہ آواز سے ڈیڑھ گنا زیادہ رفتار والا لائٹ ویٹ جدید ملٹی رول لڑاکا طیارہ جے ایف 17تھنڈر ہر موسم میں آپریشنل ہے۔ طویل فاصلے تک پرواز کے علاوہ گائیڈڈ میزائل داغ سکتا ہے اور فضا سے فضا اور فضا سے زمین پر ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ یہ طیارہ ایف 7اور اے 5طیاروں کی جگہ لے گا اور مستقبل میں پاکستان اسے برآمد بھی کریگا۔