فلسطینی عوام کے بنیادی حقوق کی خاطر مفاہمت کریں گے : حماس

22 نومبر 2009
دوحہ (نیوز لائن) اسلامی تحریک مزاحمت ( حماس ) کے سیاسی شعبے کے رکن محمد نصر نے کہا ہے کہ ان کی جماعت فلسطین میں مفاہمت کے عمل کو آگے بڑھانے کے اپنے فیصلے پر سختی سے کاربند ہے تاہم اس سلسلے میں کسی غیر ملکی دباو¿ کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ عرب نشریاتی ادارے الجزیرہ کو ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ مصر کی جانب سے مفاہمتی مسودے پر حماس کے تحفظات کے باوجود عمل درآمد اس پر دستخط کیلئے اصرار مفاہمت کے عمل کو آگے بڑھانے میں رکاوٹ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں فلسطینی عوام کے بنیادی حقوق کی خاطر مفاہمت کرنا ہے یہ مفاہمت غیر ملکی دباو¿ امریکہ اور اسرائیل کے مفاد کے لئے نہیں کرنی ہم ان کی شرائط کو اس عمل میں شامل کریں ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے فلسطینی صدر محمود عباس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ مفاہمت کو امریکہ، اسرائیل ، اقوام متحدہ اور یورپی یونین پر مشتمل چار رکنی کواٹریٹ کے ساتھ جوڑنا چاہتے ہیں۔ محمد نصر کا کہنا تھا کہ حماس فلسطین میں انتشار کے خاتمے کے اپنے فیصلے پر سختی سے قائم ہے اور اس کے لئے ہر ممکن کوشش جاری رکھے گی۔