A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

این آر او کی فہرست میں فوجداری‘ کرپشن کے مقدمات علیحدہ کئے جائیں: شجاعت

22 نومبر 2009
لاہور (خبر نگار خصوصی) مسلم لیگ (ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ این آر او سے فائدہ اٹھانے والے تمام افراد کی ملک سے فرار کی کوششیں ناکام بنانے کیلئے ان کے نام ای سی ایل میں شامل کئے جائیںاین آر او کے خاتمے کے بعد فائدہ اٹھانے والی تمام حکومتیں شخصیات کو فوری طور پر مستعفی ہو جانا چاہئے‘ ایم کیو ایم پر کرپشن کے نہیں بلکہ فوجداری مقدمات ہیں‘ ملک میں آزاد عدلیہ موجود ہے این آر او سے فائدہ اٹھانے والے عدالتوں کا سامنا کریں انہیں انصاف ضرور ملے گا‘ این آر او کے ذریعے لوٹی دولت کو تحفظ دینے والوں سے لوٹی دولت قومی خزانے میں جمع کرائی جائے۔ مرکزی سیکرٹری اطلاعات کامل علی آغا کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم خدا کا شکر ادا کرتے ہیں کہ این آر او سے فائدہ اٹھانے والوں کی لسٹ میں (ق) لیگ اور ہمارے خاندان کے کسی فرد کا نام نہیں ہے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ وہ مقدمات جو سیاسی‘ ذاتی دشمنی اور انتقامی کارروائی کے ذریعے بنائے گئے ہیں ایسے فوجداری اور دیگر کرپشن کے مقدمات کو الگ الگ کیا جائے تاکہ اصل حقائق سامنے آئیں کہ کرپشن کے مقدمات کیا ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب پرویز مشرف نے این آر او کی بات کی تو ہم چاہتے تھے کہ اس سے صرف سیاسی اور انتقامی مقدمات ختم ہوں لیکن جب اس سے کرپشن اور لوٹ مار کے مقدمات کو تو ختم کروانے کا سلسلہ شروع کیا گیا تو ہم نے اس کی شدید مخالفت کی تھی اور کبھی بھی ایسے این آر او کی حمایت نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ اگر (ق) لیگ کے دور میں کوئی کرپشن ہوئی تو ہمارے تمام لوگ تحقیقات کے حق میں ہیں اور اگر کوئی الزام ثابت ہو جائے تو متعلقہ شخص کو ضرور سزا دی جائے۔ دریں اثناء (ق) لیگ کے سیکرٹری جنرل مشاہد حسین سید نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم سیدوں والا کام کرتے ہوئے عید قرباں کے موقع پر قوم کو تحفہ دیں اور بڑی قربانی سے بچنے کے لئے وزیر داخلہ اور وزیر دفاع کی چھٹی کرائیں‘ این آر او محترمہ بینظیر بھٹو اور مشرف کا معاہدہ تھا اس سے فائدہ اٹھانے والوں کو اخلاقی جرأت کا مظاہرہ کرتے ہوئے فوری استعفیٰ دے دینا چاہئے۔