کراچی : ڈیل کرنیوالوں نے فائدہ اٹھایا‘ ہم مقدمات کا سامنا کرنے کو تیار ہیں:فاروق ستار

22 نومبر 2009
کراچی (اے این این) ایم کیو ایم کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ این آر او ایک ڈیل کے نتیجے میں سامنے آیا‘ اس کا مقصد ان لوگوں کو فائدہ پہنچانا تھا جو ڈیل کا حصہ تھے‘ ایم کیو ایم اصولوں کی سیاست کرتی ہے‘ ہم نے این آر او کو پارلیمنٹ میں لانے کی مخالف سوچ سمجھ کر کی تھی‘ ہمارے کارکنان اور رہنمائوں کیخلاف کرپشن کا کوئی الزام نہیں اس لئے ہم اخلاقی طور پر خود پر کوئی دبائو محسوس نہیں کرتے اور نہ ہی کسی قسم کا ڈر یا خوف ہے۔ الطاف حسین نے چیف جسٹس کے نام خط میں مطالبہ کیا ہے کہ قومی دولت لوٹنے والوں اور قرضے معاف کرانے والوں کا احتساب کیا جائے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے این آر او کے تحت فائدہ اٹھانیوالے افراد کی فہرست جاری ہونے کے بعد خورشید بیگم میموریل ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار نے کہاکہ ہم مقدمات کے حوالے سے عدالتوں کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہیں۔ ایم کیو ایم کے خلاف قائم کئے گئے تمام مقدمات فوجداری ہیں اور دس ہزار سے زائد کے مقدمات سیاسی بنیادوں پر مختلف حکومتوں میں بنائے گئے ہیں۔ ایم کیو ایم کے راہنما حیدر عباس رضوی نے کہا ہے کہ ہم نے اپنے افراد کے نام این آر او کی فہرست میں شامل ہونے کے باوجود اسے پارلیمنٹ سے پاس کرانے کی مخالفت کی۔ نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارا کوئی فرد کرپشن کے کیس میں ملوث نہیں اور جو بھی کیسز ہمارے اوپر بنائے گئے وہ سارے کے سارے فوجداری ہیں اور سیاسی بنیاد پر بنائے گئے ہیں اگر عدالت نے طلب کیا تو وہاں جانے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ این آر او سے فائدے اٹھانے والوں کو مستعفی ہونے کا فیصلہ خود کرنا ہو گا لیکن ہمارے اوپر اس قسم کا کوئی اخلاقی دبائو نہیں۔