مشرف کے ٹرائل کا حتمی فیصلہ ہوچکا‘ شہادتیں اکٹھی کی جا رہی ہیں: پیر مظہر الحق

22 نومبر 2009
لاہور( سٹاف رپورٹر)صوبہ سندھ کے سینئر وزیر پیر مظہر الحق نے کہا ہے کہ پرویز مشرف کے ٹرائل کا حتمی فیصلہ ہو چکا ہے اور اس حوالے سے شہادتیں اکٹھی کی جا رہی ہیں ‘این آر او سے ایم کیو ایم کے 35سو افراد نے فائدہ اٹھایا ہے صرف پیپلز پارٹی پر این آر او کا فائدہ اٹھانے کا الزام درست نہیں ‘(ن) لیگ پر کبھی جمہوریت کے خلاف سازش کا الزام نہیں لگایا لیکن ان کے بعض رہنماﺅں کے بیانات سے سازش کی بو ضرور آتی ہے ۔ وہ گزشتہ روز مقامی ہوٹل میں پیپلز پارٹی لاہور کے سابق صدر حاجی عزیز الرحمن چن کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔ پیر مظہر الحق نے کہا کہ این آر او ایک اچھا قانون ہے اور میں اس کی مکمل سپورٹ کرتا ہوں اس سے سندھ کے مظلوم اور انتقامی کاروائیوں کا نشانہ بننے والے لوگوں کے علاوہ دیگر صوبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بھی فائدہ اٹھایا ہے اور آج جو ایم کیو ایم اس کی مخالفت کر رہی ہے اس کے 3500لوگ بھی این آر او سے فائدہ اٹھا چکے ہیں ۔ پرویز مشرف نے قوم کیساتھ جو مظالم کئے وہ سب جانتے ہیں اور پیپلز پارٹی نے بھی پرویز مشرف کے ٹرائل کا حتمی فیصلہ کر لیاکہ این ایف سی ایوارڈ کے انہوں نے کہا کہ ہم نے کبھی بھی (ن) لیگ پر یہ الزام نہیں لگایا کہ وہ جمہوریت کے خلاف سازشیں کر رہی ہے لیکن احسن اقبال سمیت ان کے کئی رہنماﺅں کے بیانات ایسے آتے ہیں جن سے سازش کی بو آتی ہے لیکن بعد میں انکی پارٹی قیادت ہی اس کی تردید بھی کر دیتی ہے ۔