ایشیا کپ کا فائنل .... جیت پاکستان کی ہی ہے

22 مارچ 2012
انعام الحق علوی
ایشیا کپ کا فائنل آج 2000ءکی چیمپئن پاکستان اور بنگلہ دیش (سابقہ مشرقی پاکستان) میں میرپور میں کھیلا جائے گا۔ بنگلہ دیش کے فائنل میں پہنچنے پر خوشی ہے کیونکہ پہلی بار ایشیا کپ کے فائنل میں پہنچنے والی ٹیم 1971ءسے قبل پاکستان کا ہی حصہ تھی جس کو مفاد پرست عناصر نے ہم سے جدا کر دیا۔ ہمارے نزدیک آج کے میچ میں دونوں ٹیموں میں سے کوئی بھی ٹیم جیتے جیت پاکستان کی ہی ہے۔ لیکن عوام پاکستان اور بھارت کے مابین فائنل کے خواہش مند تھے۔ جو نہ ہونا بہتر تھا کیونکہ پاکستان کے عوام بھارت کے ساتھ میچ کھیلنے میں بہت جذباتی ہیں اور ہار کی صورت میں کئی دل کے مریض جان سے ہاتھ دھو سکتے تھے۔ نذر منہاس ایسے ہی پاکستانی تھے جو 1987ءکے ورلڈ کپ میں پاکستان ویسٹ انڈیز کے میچ میں میانداد کے آ¶ٹ ہونے پر ہارٹ اٹیک سے جاں بحق ہو گئے تھے۔ اس واقعہ کے گواہ نوائے وقت کمپیوٹر سیکشن کے انچارج فیاض احمد (با¶ جی) ہیں۔ کرکٹ کا کھیل کارکردگی سے نکل کر سٹہ بازاروں میں بکنے لگا ہے جہاں کرکٹر بکا¶ مال ہے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان بھارت میچ پر دنیا بھر میں 4کھرب روپے کا سٹہ لگا ہے۔ سٹہ تو آج بھی لگے گا۔ اور عوام کی رائے ہے کہ پاکستان ملک میں بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے عوض جذبہ خیرسگالی کے تحت ایشیا کپ بنگلہ دیش کو دے سکتا ہے۔ تاہم پاکستان ایشیا کپ کے 12سال بعد دفاع کی کوشش کرے گا اور بنگلہ دیش سے لیگ میچ میں فتح کے بعد پاکستان کو اس پر نفسیاتی برتری حاصل ہے۔