امریکہ کے ساتھ دہشتگردی کے خلاف جنگ کے حوالے سے دو معاہدے تھے، ایک فروری میں ختم ہوگیا دوسرا جون میں ختم ہو جائے گا۔ عبد الباسط

22 مارچ 2012 (19:25)
اسلام آباد میں ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بارانتظامیہ کی بجائے مقننہ فیصلے کرے گی اور پارلیمنٹ کی سفارشات کے بعد امریکہ سے دو طرفہ مذاکرات کا سلسلہ دوبارہ شروع ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ گوانتا ناموبے میں پانچ پاکستانی قید ہیں انکی رہائی کیلئے امریکہ کے ساتھ بات چیت جاری رہتی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انکا کہنا تھا کہ پاکستان یہ صلاحیت رکھتا ہے کہ ملک میں دہشتگردوں کو پکڑ سکے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ دس سال میں سات سو سے زائد القاعدہ کے کارکنوں کو ہلاک اورگرفتارکیا گیا ہے۔ عبدالباسط نے کہا کہ ڈرون حملوں سے متعلق کوئی معاہدہ نہیں ہوا اور پاکستان ڈرون حملوں کی مخالفت کرتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ صدر آصف علی زرداری پچیس مارچ کو تاجکستان کا دورہ کریں گے جہاں وہ چار ملکی مذاکرات میں شرکت کریں گے۔