پی سی بی نےشرجیل خان اورخالد لطیف کوجیل جانے سے بچایا،امید ہے معاملہ کی تحقیقات شفاف طریقے سے ہوں گی: شعیب اختر

22 فروری 2017 (18:15)

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق ٹیسٹ کرکٹر شعیب اختر کا کہنا تھا کہ دو لڑکوں کی بے وقوفی سے پی ایس ایل بدنام ہوئی، دونوں کھلاڑیوں کو پی سی بی کا شکر گزار ہونا چاہیے،اگردبئی میں سزا ہوتی تو اب وہ جیل میں ہوتے.انہوں نے کہا کہ پی سی بی کو فکسنگ روکنے کیلیے سخت اقدامات کرنا ہوں گے، جہاں کہیں کالی بھیڑیں ہوتی ہیں ان کا سدباب بھی کرنا چاہیے.

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کا اینٹی کرپشن یونٹ نااہل لوگوں پرمشتمل ہے، امید ہے شرجیل خان اور خالد لطیف سے متعلق شفاف تحقیقات ہوں گی اور سیٹھی صاحب خوش اسلوبی کے ساتھ معاملے سے نمٹ لیں گے کیونکہ اگر بات عدالت تک پہنچی توپنڈورا باکس کھل جائے گا.
سابق کرکٹر نے کہا کہ میچ فکسنگ ہر جگہ ہوتی ہے لیکن اس سے لیگ کرکٹ ختم نہیں ہوتی،آئی پی ایل میں بھی میچ فکسنگ ہوئی، اس کو بھی روکنا چاہیے.شعیب اخترکاکہنا تھاکہ ٹیمیں بری نہیں ہوتیں، کھیلنےوالےکچھ کھلاڑی برے ہوتے ہیں، مصباح الحق کو ریٹائرمنٹ کا فیصلہ خود کرنا ہوگا۔