وفاقی دارالحکومت میں وزیر دفاع کےخلاف احتجاجی مظاہرہ، امریکہ اور بھارت کے پرچم نذر آتش

22 فروری 2017

اسلام آباد(وقائع نگار خصوصی)وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں وزیر دفاع خواجہ آصف کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ہے ، مقررین نے کہا کہ خواجہ آصف نے حافظ سعید کے خلاف بیان دے کر کشمیریوں کے زخموں پر نمک چھڑکا ہے جبکہ پاکستان کی دشمن قوتیں اوربھارت جشن منارہا ہے ۔ خواجہ آصف پاکستان کیلئے بدنامی کا باعث فوری ہٹایا جائے ۔ ان خیالا ت کا اظہار انجمن تاجران پاکستان کے سربراہ اجمل بلوچ جماعت اسلامی اسلام آباد کے رہنما چوہدری کاشف ، پاکستان تحریک انصاف اسلام آباد کے سیکرٹری جنرل عمران خان اور عظمت اللہ سلطان نے پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ احتجاجی مظاہرے میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی مظاہرین نے حافظ سعید کے حق اور خواجہ آصف کے خلاف شدید نعرے بازی کی مظاہرین نے پاکستان کے پرچم اٹھا رکھے تھے۔ اجمل بلوچ نے کہا کہ خواجہ آصف نے جو بیان دیاہے یہی پاکستان کے دشمن چاہتے تھے ۔پوری قوم خواجہ آصف کے بیان کی مذمت کرتی ہے ۔ کاشف چوہدری نے کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی میں پاکستانیوں کا فرض ہے کہ وہ ان کا ساتھ دیں ۔ خواجہ آصف نے پارلیمنٹ میں آکر عوام سے معافی مانگیں ۔ ان کے بیان سے پاکستان کو نقصان ہوا ہے ۔ مودی کو خوش کرنے کیلئے ایسے بیان دیئے جارہے ہیں ۔ عمران خان نے کہا کہ خواجہ آصف نے ایسے شخص کے خلاف بیان دیا جس نے پاکستانیوں کے ایک قوم کو بتایا خواجہ آصف پاکستان کا دفاع نہیں کررہا ہے باہر جاکر حافظ سعید پر الزام لگاتے ہیں ۔ عظمت اللہ سلطان نے کہا کہ حافظ سعید نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستانیوں اور پاک فوج کا حوصلہ بلند کیا ۔ ان کے خلاف بیان پر چوہدری نثار نوٹس لیں اگر اپنی حکومت بچانی ہے تو خواجہ آصف جیسے وزیر سے جان چھڑائیں ۔ خواجہ آصف کے بیان پاکستانیوں کے لیے بدنامی کا باعث ہے فوری ہٹایا جائے۔ احتجاجی مظاہرے کے اختتام پر امریکہ اور بھارت کا پرچم نذر آتش کیا گیا ۔