سندھ ہائیکورٹ : صوبے کی جیلوں میں جعلی قیدیوں سے متعلق ریکارڈ طلب

22 فروری 2017

کراچی (آئی این پی) سندھ ہائیکورٹ نے سندھ کی جیلوں میں جعلی قیدیوں سے متعلق درخواست پر جیل انتظامیہ کو ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 13 مارچ تک ملتوی کر دی۔عدالت میں ڈی آئی جی جیلز اور سینٹرل جیل سپرنٹنڈنٹ پیش ہوئے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس منیب اختر کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے انصار برنی ٹرسٹ کی جانب سے جیلوں میں جعلی قیدیوں سے متعلق دائر درخواست پر سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ سندھ کے جیلوں میں 41 جعلی قیدی اسیر ہیں۔ دوسری طرف عدالت میں ڈی آئی جی جیلز اور سینٹرل جیل سپرنٹنڈنٹ پیش ہوئے اور جیل انتظامیہ کی جانب جواب داخل کیا جس میں کہا گیا کہ جن قیدیوں کی فہرست فراہم کی گئی ان میں سے کچھ رہا ہو گئے اور باقی ضمانت پر ہیں جیل میں کوئی جعلی ناموں سے قید نہیں۔ عدالت نے بائیو میٹرک سسٹم کے حوالے سے حکومت سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت 13 مارچ تک ملتوی کر دی۔