دہشت گردوں کیخلاف موثر آپریشن کیا جائے: وزیراعلیٰ سندھ

22 فروری 2017

کراچی (نوائے وقت رپورٹ) وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کی زیر صدارت سندھ میں سکیورٹی سے متعلق اجلاس ہوا وزیراعلیٰ سندھ کو سی ٹی ڈی اور دیگر اداروں نے تحقیقات سے آگاہ کیا ترجمان کے مطابق وزیراعلیٰ کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ سیہون دھماکے سے پہلے ریکی کی گئی، سیہون دھماکہ منصوبہ بندی کے ساتھ کیا گیا۔ شاہ نورانی اور شکار پور دھماکے کو ملا کر تحقیقات کو آگے بڑھایا جا رہا ہے۔ بلوچستان پولیس اور دیگر ادارے تحققات میں مدد کر رہے ہیں۔ سیہون واقعہ کے حوالے سے ٹیمیں پنجاب روانہ کر دیں۔ وزیراعلیٰ نے ڈی جی رینجرز کی سربراہی میں اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی تشکیل دیدی کمیٹی میں پولیس اور حساس اداروں کے سینئر افسران شامل ہیں۔ کمیٹی امن و امان، سکیورٹی اور الرٹس کے حوالے سے کام کریگی۔ کمیٹی روزانہ کی بنیاد پر رپورٹ پیش کرے گی۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ کراچی اور مضافات میں آپریشن جاری ہیں۔ اسکے علاوہ حیدر آباد، سکھر اور لاڑکانہ ڈویژن میں آپریشن جاری ہیں۔ وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے مزارات، مدارس، مندر اور عوامی مقامات کی سکیورٹی پر رپورٹ طلب کر لی۔ مراد علی شاہ نے پولیس، رینجرز اور دیگر اداروں کو کریک ڈاؤن شروع کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ دہشت گردوں کیخلاف بے رحمانہ آپریشن شروع کریں۔ بچوں اور معصوم عوام کو دہشت گردی کے واقعات میں کھویا ہے، دہشت گردوں کیخلاف درست منصوبہ بندی ہونی چاہئے۔