گندم ایکسپورٹرز کو ری بیٹ کی فوری ادائیگی کی جائے

22 فروری 2017

مکرمی! گندم ایکسپورٹ ری بیٹ کی مد میں وفاق اور حکومت پنجاب کی جانب واجب الادا 6762 ملین روپے کی ادائیگی میں تاخیر فلور ملنگ انڈسٹری کے معاشی استحصال کا سبب بن رہی ہے مزید تاخیر کی بجائے ایکسپورٹرز کو ری بیٹ کی فوری ادائیگی کی جائے۔ جون 2016ء کے بعد سے تاحال گندم ایکسپورٹ ری بیٹ کی مد میں وفاق اور پنجاب نے ایک پیسہ کی بھی ادائیگی نہیں کی ہے۔ پنجاب حکومت نے ری بیٹ کی مد میں 1820 ملین روپے جبکہ وفاق نے چار ہزار 9 سو 42 بلین روپے ادا کرنا ہیں۔ ری بیٹ کی عدم ادائیگی کی وجہ سے ایکسپورٹرز شدید معاشی دبائو کا شکار ہیں اور اس ضمن میں مزید بوجھ کی استطاعت نہیں رکھتے۔ وفاقی اور پنجاب حکومت کاروباری طبقوں میں اپنی ساکھ اور اعتبار کو خود ہی مجروح کر رہے ہیں جس کے منفی اثرات مرتب ہونگے۔ حکومتی رویے کی وجہ سے اب تک درجنوں ایکسپورٹرز مزید ایکسپورٹ بند کر چکے ہیں جبکہ حکومت پر بداعتمادی کی چھاپ لگنے سے آئندہ گندم خریداری مہم میں نجی شعبہ کی عدم شرکت سے حکومت اور کسانوں کو مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ وسیع تر قومی مفاد کی خاطر حکومت ری بیٹ کی فوری ادائیگی کو یقینی بنائے تاکہ فلور ملنگ سیکٹر عملی احتجاج پر مجبور نہ ہو جائے۔ (چودھری محمد اکمل چیمہ، سیالکوٹ کینٹ)

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...