گوجرانوالہ: سرکاری ہسپتال کے ڈاکٹروں نے معمر مریض کو وارڈ سے نکال دیا، بوڑھا بیٹی کی گود میں سر رکھ کر روتا رہا

22 فروری 2017

گوجرانوالہ (نمائندہ خصوصی) سرکاری ہسپتال میں ڈاکٹروں کی بے حسی کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا۔ وارڈ سے نکالا جانیوالا معمر شخص بیٹی کی گود میں سر رکھ کر آنسو بہانے لگ گیا۔ تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ ہسپتال میں مسیحانے بے حسی کی انتہا کر تے ہو ئے فالج کے مریض کچی فتومنڈ کے رہائشی معمر رکشہ ڈرائیور یونس کا علاج معالجہ کرنے کی بجائے اسے وارڈ سے باہر نکال دیا جس پر معمر شخص ہسپتال کے باہر اپنی بیٹی کی گود میں سر رکھ کر غربت کا مذاق اڑانے پر آنسو بہانے لگ گیا جبکہ میڈیا کو افسردگی کے عالم میں باپ بیٹی نے بتایا کہ وہ دو دن سے ذلیل ہو رہے ہیں، ہسپتال میں علاج کی بجائے بیڈ نہ ہونے پر ایک سے دوسرے وارڈ میں چکر لگوائے جا رہے ہیں۔