;شریف فیملی کی شوگر ملز میں کرشنگ روکنے کے حکم امتناعی میں کل تک توسیع

22 فروری 2017

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے شریف خاندان کی شوگر ملز کی منتقلیکے خلاف دائر درخواست میں قرار دیا ہے کہ عدالت کو آگاہ کیا جائے جنوبی پنجاب میں کپاس کی فصل کاشت ہونی چاہئے یا نہیں۔ شریف خاندان کے وکیل نے کہا کہ سرکاری نوٹیفکیشن کے بعد ملز کی منتقلی میں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں۔ قانون کے تحت صوبے میں ایک جگہ سے دوسری جگہ شوگر ملز کی منتقلی کے لئے اجازت کی ضرورت نہیں۔ حسیب وقاص سمیت چاروں شوگر ملز پابندی سے قبل منتقل کی گئیں۔ کسانوں کی جانب سے عدالت کو آگاہ کیا گیا کہ جنوبی پنجاب میں دیگر فصلوں کی بجائے گنے کی فصل زیادہ کاشت کی جاتی ہے۔ کرشنگ کا عمل بند ہونے سے کسانوں کے پیسے ڈوبنے اور انہیں مالی نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے۔ عدالت نے سماعت 23 فروری تک ملتوی کرتے ہوئے وکلا کو مزید بحث کے لیے طلب کر لیا۔ جبکہ کرشنگ روکنے کے حکم امتناعی میں آئندہ تاریخ تک توسیع کر دی۔