مقبوضہ کشمیر: بھارتی فوج نے طالب علم سمیت2نوجوانوں کو شہید کردیا، غیر قانونی نظر بندیوں کیخلاف مظاہرے، دھرنے

22 فروری 2017

سری نگر (اے این این+ این این آئی) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے مظالم جاری ¾ پٹن میں فائرنگ کرکے طالب علم سمیت 2 نوجوانوں کو شہید کردیا ¾ شاہد احمد گنائی کو گزشتہ روز بھارتی فوجی گھر سے گرفتار کرکے لے گئے تھے ¾ گولیوں سے چھلنی نعش کھائی پورہ نالہ سے برآمد ہوئی ¾ طالب علم کی شہادت پر اہل علاقہ سراپا احتجاج ¾ وادی کے مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے ¾ مشتعل نوجوانوں نے پتھراﺅ کرکے ایک درجن سے زائد اہلکاروں کو زخمی کردیا۔ ترال میں مجاہدین کی موجودگی کو جواز بنا کر بھارتی فوج کی رہائشی مکانوں پر بھاری ہتھیاروں سے فائرنگ ¾ کئی مکانوں کو شدید نقصان پہنچا ¾ کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ تفصیلات کے مطابق شمالی قصبہ پٹن کے محمودپورہ علاقے میں اس وقت صف ماتم بچھ گئی جب گزشتہ روز لاپتہ ہو ئے طالب علم کی نعش کو برآمد کیا گیا۔ لواحقین کے مطابق دسویں جماعت میں زیر تعلیم شاہد احمد گنائی کو گزشتہ روز بھارتی فوجی اہلکارو ں نے گھر سے گرفتارکرلیاتھا جس کی گزشتہ روز گولیوں سے چھلنی نعش کھائی پورہ نالہ سے برآمد ہوئی ۔ ادھرپٹن کے ہی نولری علاقے میں ایک 18سالہ لڑکا پراسرار طور لاپتہ ہوگیا ہے جس کے نتیجے میں اہل خانہ میں تشویش کی لہر دوڑ گئی۔ ادھر پولیس اور سی آر پی ایف نے سرینگر جموںشاہراہ پر زیر زمین چھپائی گئی ایک بارودی سرنگ کا پتہ لگا کر ایک بڑے حادثے کو ٹالنے کا دعوی کیا۔ بھارتی فوجےوں نے اپنی رےاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع راجوری مےں اےک اورکشمےری نوجوان کو شہےد کردےا۔ کشمےرمےڈےا سروس کے مطابق نوجوان کو ضلع کے علاقے کےری مےں بھارتی بارڈر سکےورٹی فورسز کے اہلکاروں نے تلاشی اور محاصرے کی اےک کارروائی کے دوران شہےد کےا۔ درےں اثناءضلع بانڈی پورہ کے علاقے صدرہ کوٹ پائےن مےں دوسرے روز بھی زبردست بھارت مخالف مظاہرے جاری رہے۔ علاقے کے لوگوں نے صحافےوں سے باتےں کرتے ہوئے کہاکہ بھارتی فوجیوںنے رات کے وقت گھروں مےں داخل ہوکر توڑ پھوڑ کی اور مکےنوں کو تشدد کا نشانہ بناےا۔ سیاسی نظربندوں کی مسلسل نظربندی اور انکی حالت زار کے خلاف حیدر پورہ سرینگر میں احتجاجی مظاہرے اور دھرنا دیا گیا ۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مظاہرے اور دھرنے کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے جیلوں میں نظر بند حریت رہنماﺅں اور کارکنوں کے ساتھ یکجہتی کیلئے دی تھی۔بھارتی فورسز کے پےلٹس سے زخمی ہونے والا نوجوان وسےم احمد ٹھوکر 6 ماہ تک موت و حےات کی کشمکش مےں رہنے کے بعد دم توڑ گےا۔ کشمےر مےڈےا سروس کے مطابق ضلع کولگام سے تعلق رکھنے والا وسےم احمد گزشتہ سال مرہامہ مےں اےک پرامن مظاہرے کے دوران بھارتی فورسز کے پےلٹس سے شدےد زخمی ہواتھا۔ انہےں 300 سے زائد پےلٹس لگے تھے اور وہ گزشتہ روز زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہےد ہوا۔