;پی ٹی آئی فنڈنگ کیس، ہائیکورٹ سے تفصیلی فیصلہ تک سماعت ملتوی

22 فروری 2017

اسلام آباد(خصوصی نمائندہ) الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی فنڈنگ کیس کی سماعت 7مارچتک ملتوی کر دی گئی ۔ درخواست گزار اکبر ایس بابر کے وکیل نے کمیشن کو بتایا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ کا تحریری حکم نامہ تاحال موصول نہیں ہوا۔جس پر چیف الیکشن کمشنر جسٹس ریٹائرڈ سردارمحمد رضا خان نے کہاکہ ہائیکورٹ کا تحریری حکم نامہ پڑھنے کے بعد ہی دلائل سنیں گے۔گزشتہ روز چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ خورد برد کیس کی سماعت ہوئی ۔ ہاشم علی بھٹہ نے الیکشن کمیشن میں عمران خان کی نااہلی کیس بحال کرنے کی درخواست دائر کی۔الیکشن کمیشن نے نااہلی درخواست بحال کرنے پر عمران خان کو نوٹس جاری کردیا۔عمران کے خلاف ہاشم بھٹہ اور اکبر شیر بابر کی درخواستیں دائر کر رکھی ہیں ۔ وکیل ہاشم بھٹہ کا کہنا تھا کہ میرا کیس اکبر ایس بابر کے کیس سے مختلف ہے ۔میں نے ممنوعہ ذرائع سے پارٹی آمدن کو چیلنج کیا ہے وہ بیرون ملک اور اندرون ملک سے بھی ہو سکتے ہیں۔اکبر ایس بابر کے وکیل نے کہا کہ استدعا ہے کہ روز کی بنیاد پر سن کر کیس کا فیصلہ دیا جائے ۔چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ ہائی کورٹ کے فیصلہ کا انتظار کیا جائے ۔آج کچھ نہیں ہو رہا ہائی کورٹ کا فیصلہ آنے دیں۔سماعت 7 مارچ تک ملتوی کر دی گئی ۔سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے منحرف رہنماءپی ٹی آئی اکبر ایس بابر نے کہا کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان دوسروں کے خلاف کرپشن کے الزامات عائد کرتے ہیں مگر اپنی پارٹی کی کرپشن کو چھپانا چاہتے ہیں انہوں نے کہاکہ گذشتہ دو سالوں سے کیس کی سماعت ہورہی ہے مگر پی ٹی آئی کی جانب سے مختلف حیلوں بہانوں سے کیس کی سماعت روکنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ امید ہے 7 مارچ تک اسلام آباد ہائیکورٹ کا تحریری فیصلہ الیکشن کمیشن کو موصول ہو جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی فاﺅنڈر گروپ کے نام سے تنظیم بنائی ہے اور ہمارے ساتھ پی ٹی آئی کے نظریاتی کارکن رابطہ کر رہے ہیں اور جلد ہی ملک گیر تحریک کا آغاز کریں گے ۔