;ہاتھیوں پر ہاتھ ڈالا گیا تو مچھر خود بخود ٹھیک ہو جائیں گے‘ سراج الحق

22 فروری 2017

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پانامہ پےپرز سکینڈل کا فیصلہ کرپشن کے خلاف اور عوام کے حق میں ہوگا‘ ”ہاتھیوں“ پر ہاتھ ڈالا گیا تومچھر خود بخود ٹھیک ہوجائیں گے۔ نیب اور ایف بی آر نے پانامہ کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری نہیں کیں،سپریم کورٹ میں سوال و جواب سے ثابت ہوتا ہے کہ نیب اور ایف بی آر نے 100 فیصد سیاسی فیصلے کئے ہیں،سرکاری ادارے صرف غریبوں کے احتساب کے لئے ہیں‘ کرپشن کرنے والے لوگ اور ان کے سہولت کار بھی مجرم ہیں تمام ادارے فیصلے دیتے وقت حکومت کی آنکھوں کو دیکھتے ہیں کہ حکومت کا موڈ کیا ہے،کیا جرائم اور گناہوں پر پردہ ڈالنے اور چشم پوشی کرنے والے ادارے اسی طرح ان جرائم میں ملوث نہیں ہیں؟ امیدہے کہ پانامہ سکینڈل کا فیصلہ عوام کے حق میں اورکرپشن کے خلاف ہو گااس پاکستان کرپشن فری ملک بن جائے گا، ‘ منگل کو سپریم کورٹ کے باہر صحافےوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نیبچیئرمین کی تقرری کا اختیار وزیراعظم کی اور قائد حزب اختلاف سے واپس لینا ہو گا۔ اس کے لئے مناسب ادارہ سپریم کورٹ کا چیف جسٹس، ہائیکورٹ اسلام آباد سمیت چاروں صوبائی ہائی کورٹس کے چیف جسٹسز کے مشورہ سے ہو تاکہ یہ ادارہ 100 فیصد غیرجانبدار ہو، 100 فیصد ایک ثالثی ادارہ ہو اور یہ کسی کے احسان کا نہ ہو،