مسلمانوں کی تقدیر ان کے اپنے ہاتھ میں ہے

22 فروری 2017

مسلمانوں کی تقدیر ان کے اپنے ہاتھ میں ہے۔ وہ منظم طاقت کی حیثیت سے ہر خطرے اور ہر مصیبت کا مقابلہ کر سکتے ہیں۔ مسلمانو! تمہارے ہاتھوں میں ساحرانہ قوت موجود ہے۔ کسی فیصلے پر پہنچنے سے پہلے ایک ہزار مرتبہ غور کرو لیکن جب کوئی فیصلہ کر لو تو اس پر سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح ڈٹ جا¶۔
(مسلم یونیورسٹی، علی گڑھ۔ 5 فروری 1938ئ)