پاکستان سمیت دنیا بھر سے اس برس 30 لاکھ مسلمان حج کی سعادت حاصل کرینگے

21 اکتوبر 2012
 پاکستان سمیت دنیا بھر سے اس برس 30 لاکھ مسلمان حج کی سعادت حاصل کرینگے

مکہ مکرمہ (اے پی پی) پاکستان سمیت دنیا بھر سے 30 لاکھ مسلمان رواں سال حج کی سعادت حاصل کر یںگے، 5روزہ مناسک حج کی ادائےگی کا آغاز بدھ 24اکتوبر سے ہو گا، حج کا رکن اعظم وقوف عرفہ 25 اکتوبر جمعرات کو ہو گا، دنیا بھر سے 1400 شخصیات شاہی خاندان کی دعوت پر حج کریں گی، مقدس مقامات پر حجاج کرام کے تحفظ اور کسی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کےلئے سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ اب تک 15 لاکھ سے زائد مسلمان حج کی ادائیگی کےلئے سعودی عرب پہنچ چکے ہیں۔ عازمین مناسک حج کی ادائےگی کا آغاز 24 اکتوبر بروز بدھ کو منیٰ پہنچ کر کریں گے۔ ایک دن منیٰ میں قیام کے بعد 25 اکتوبر جمعرات کی صبح میدان عرفات کےلئے روانہ ہونگے جو حج کا رکن اعظم ہے۔ میدان عرفات میں خطبہ حج سنیں گے، ظہر اور عصر کی نمازیں ملا کر پڑھی جائےگی۔ جمعرات کو ہی مغرب کے وقت حجاج کرام مزدلفہ کی طرف روانہ ہونگے جہاں وہ مغرب اور عشاءکی نماز اکٹھی پڑھیں گے۔ حجاج کرام رات مزدلفہ میں ہی گزاریں گے۔ 26 اکتوبر جمعہ کی صبح حجاج کرام منیٰ واپس روانہ ہونگے جہاں وہ رمی جمرات کریںگے۔ پہلے بڑے شیطان کو ،پھر درمیانے اور اس کے بعد چھوٹے شیطان کوسات سات کنکریاں ماری جائےںگی۔ شیطان کو کنکریا ں مارنے کے بعد حجاج کرام اللہ کی راہ میں جانور قربان کریںگے پھر اپنا سر منڈوا کر احرام کھو ل کر عام لبا س پہنےںگے اور پھر مزید دو روز تک منیٰ میں ہی قیام کریںگے۔26 اکتوبر کو ہی حجاج کرام بیت اللہ کے طواف زیارت کےلئے مکہ روانہ ہو نگے۔27اکتوبر ہفتہ کوحجاج کرام ایک بار پھر رمی جمرات کریںگے اور سارا دن اور رات عبادت میں گزاریںگے۔ 28اکتوبر اتوار کو آخری بار تینوں شیطانوں کو کنکریاں مارنے کے بعد حجاج کرام مغرب ہونے سے پہلے منیٰ کی حدود سے نکل جائےں گے ۔ انسداد دہشت گردی فورس کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل محمد بن حماد نے بتایا کہ فورس کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔ سعودی محکمہ شہری دفاع کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل سعد الطوارجی نے بتایا کہ شہری دفاع کا محکمہ حج آپریشن کے دوران ممکنہ خطرات سے نمٹنے کےلئے مکمل طور پر تیار ہے۔