جنرل اسلم بیگ جمہوریت کیلئے رول ماڈل ہیں: حمید گل

21 اکتوبر 2012


آسلام آباد (آن لائن )آئی ایس آئی کے سابق سربراہ جنرل (ر) حمید گل نے کہا ہے کہ اصغر کیس کی تحقیقات میں ملوث سیاستدان خود کو ایف آئی اے سے باآسانی کلیئر کرالیں گے، کیس کی تحقیقات لمبا مرحلہ ہے جس سے موجودہ جمہوری عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے، بلوچستان میں گورنر راج نافذکیا جائے صوبے سے ایف سی نکالی گی تو خانہ جنگی ہو گی، الیکشن عدلیہ کی نگرانی میں نہیں ہو نے چاہئے کل کو لوگ اقوام متحدہ کی نگرانی میں الیکشن کرانے کا مطالبہ کریں تو پھر کیا ہو گا۔ فوج کے ادارے کو کچھ ہوا تو پھر کچھ بھی نہیں بچے گا۔ اس امر کا اظہار انہوں آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ مارشل لالگنے میں ٹرپل ون برگیڈکا کردار زیادہ اہم ہوتا ہے اگر اس وقت کوئی فوجی افسر حکم ماننے سے انکار کر دے تو انہیں کسی بھی عدالت سے ریلف نہیں ملتا۔ انہوں نے کہا کہ سابق آرمی چیف کا معاملہ ایف آئی کے سپرد نہیں کرنا چاہئے کیونکہ آرمی ایکٹ موجود ہے جس سے وہ کال کر سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ سب کچھ فوج کو بدنام کرنے کے لیے کیا جا رہا ہے اس طرح کی حرکات ہوتی رہیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ”پرویز مشرف مےرا جونیئر تھا اور مےں اس کا رول ماڈل تھا اور جنرل اسلم بیگ منجھے ہوئے جنرل ہےں یہ جمہوریت کے لئے ایک رول ماڈل کی حیثیت رکھتے ہےں،اسلم بیگ کے سامنے حکمرانی پڑی ہوئی تھی مگر انہوں نے اسے ٹھکرا دیا“۔